زرعی مارکیٹنگ کے نظام کو از سر نو تشکیل دینا ہوگا‘فیصل آبادچیمبر

زرعی مارکیٹنگ کے نظام کو از سر نو تشکیل دینا ہوگا‘فیصل آبادچیمبر

  



فیصل آباد (بیورورپورٹ) زرعی شعبہ کو مستحکم اور پائیدار بنیادوں پر استوار کرنے کیلئے زرعی مارکیٹنگ کے نظام کو از سر نو تشکیل دینا ہوگا تاکہ مڈل مین کے کردار کو محدود کر کے کسانوں کیلئے زراعت کو دوبارہ منافع بخش پیشہ بنایا جا سکے۔ یہ بات فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹری کی ایگری ٹورازم اینڈ سوک پرابلمز بارے قائمہ کمیٹی کے چیئرمین سید خالد محمود نے آج یہاں ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ دس سالوں میں زمینداروں کو زبردست خسارہ اٹھانا پڑا جس کی وجہ سے بہت سے کسان اپنی زمین فروخت کرنے پر مجبور ہو گئے۔ انہوں نے کہا کہ فیصل آباد چیمبر کی یہ قائمہ کمیٹی زراعت کو شعبہ کو از سر نو منافع بخش بنانے کے ساتھ ساتھ اس کی اصل روح کو بھی زندہ کر رہی ہے تاکہ شہروں میں پیدا ہونے والی نئی نسل کو دنیا کے اس قدیم ترین پیشے کے بارے میں آگاہ کیا جا سکے۔ انہوں نے بتایا کہ یہ قائمہ کمیٹی اب تک پانچ مختلف زرعی اجناس کے بارے میں فیسٹیول منعقد کرا چکی ہے جن میں قومی سطح کے گڑ اور آم میلے بھی شامل ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ 9جون کو سانگلہ ہل شاہکوٹ روڈ پر رانا عبدالقیوم گریپ فارم پر نیشنل گریپ ہارویسٹ میلہ ہورہا ہے۔ اس میلے کے دوران لوگوں کو انگور سے بننے والی مختلف اشیاء بارے آگاہی دی جائے گی جبکہ اس تقریب کو دلچسپ اور رنگا رنگ بنانے کیلئے تفریحی نوعیت کے پروگرام بھی ترتیب دیئے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ اس میلے کے دوران لوگوں کو مارکیٹ سے نصف قیمت پر انگور فروخت بھی کئے جائیں گے۔ قائمہ کمیٹی کے وائس چیئرمین محمد طارق تنویر نے بتایا کہ یہ فیسٹیول کرانے کا مقصد صارفین اور کسانوں میں براہ راست رابطوں کو فروغ دینا ہے۔ انہوں نے بتایاکہ اس کمیٹی کے ذریعے کسانوں تک نئی ٹیکنالوجی بھی متعارف کرائی جائے گی تاکہ زرعی پیداوار میں اضافہ سے کسانوں کے منافع میں بھی اضافہ کیاجا سکے۔ گریپ فیسٹیول کے حوالے سے انہوں نے بتایا کہ اس میلے میں مختلف سکولوں کے طلبہ کو بھی دعوت دی جائے گی تاکہ انہیں انگور کی پیداوار کے مختلف مراحل بارے آگاہ کیا جا سکے۔

اس تقریب میں قائمہ کمیٹی کے ممبران عبدالقیوم خاں، محمد مشتاق، خرم بن شفیق، حیدر علی، جواد حسین اور ذیشان نے بھی شرکت کی۔

مزید : کامرس


loading...