فریال تالپو کی زیر صدارت سندھ اسمبلی کی قائمہ کمیٹی داخلہ کا اجلاس

فریال تالپو کی زیر صدارت سندھ اسمبلی کی قائمہ کمیٹی داخلہ کا اجلاس

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا سندھ اسمبلی کے کمیٹی روم میں گزشتہ روز اجلاس ہوا،اجلاس کی صدارت قائمہ کمیٹی کی چیرپرسن فریال تالپور نے کی۔ اجلاس میں مشیر اطلاعات قانون و اینٹی کرپشن سندھ بیرسٹر مرتضی وہاب، شرجیل میمن، قاسم سومرو، شمیم ممتاز، نور احمد بھرگڑی، گہنور خان اسران، سید ذوالفقار شاہ، فرخ شاہ اور دیگر ارکان شریک ہوئے۔اجلاس میں سیکرٹری محکمہ داخلہ نے کمیٹی ارکان کو امن وامان کی موجودہ صورتحال پر بریفنگ دی جبکہ قیام امن کے حوالے سے اٹھائے گئے اقدامات پر بھی بریفنگ دی۔ وزیرپارلیمانی امور قائمہ کمیٹی کے اجلاسوں سے مسلسل غیرحاضر ہیں وزیر پارلیمانی امور مکیش کمار چاولہ قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کے اہم اجلاس میں بھی موجود نہیں تھے۔شرجیل میمن کو پروڈکشن آرڈر پرجیل سے لایاگیا تھا۔کمیٹی کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ محکمہ پولیس میں افسران کی ترقی کانظام موثربنایاگیاہے ڈی ایس پیز کو حال ہی میں ترقی دی گئی قائمہ کمیٹی کی چیئرپرسن فریال تالپور نے امن وامان کی مجموعی صورتحال پراستفسار کی۔اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کی چیئرپرسن فریال تالپور نے کہا کہ اجلاس میں سیکرٹری داخلہ نے امن وامان کی مجموعی صورتحال پر بریفنگ دی ہے ہم نے کچی شراب اور گٹکے کی فروخت پر ایکشن لینے کا کہا ہے دیکھا گیا ہے کہ ماہ رمضان میں بھی کچی شراب کی فروخت کی جارہی ہے گٹکے کی فروخت کے سدباب کے لئے اقدامات اٹھانے کی ہدایت کی ہے گٹکا کینسر جیسی مہلک بیماری کا سبب بن رہا ہے کوشش ہے کہ آئندہ اجلاس میں آئی جی سندھ پولیس بھی شریک ہوں اور وہ اس صورتحال پر کمیٹی ارکان کو تفصیلی بریفنگ بھی دیں۔ میڈیا کے مختلف سوالوں کے جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں بے گناہ اور بے قصور ہوں میں اور میرا بھائی اپنی قانونی جنگ لڑرہے ہیں معلوم نہیں کہ مجھے گرفتار کیاجارہاہے ہم نے تمام قانونی تقاضے پورے کئے ہیں جوہوگا بہترہوگا ججز سے امید ہے کہ وہ منصفانہ فیصلہ کرینگے۔انہوں نے کہا کہ دومرتبہ ضلعی ناظمہ رہی اپنے شہر میں بڑے کام کرائے جب ضلعی ناظمہ تھی تو لوگوں کو میرے خلاف کچھ نہیں ملا لوگ تلاش کرنے کی کوشش کرتے ہیں مگر انہیں ناکامی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ آئندہ بھی انہیں ناکامی ہوگی۔ ہم نے ملک اور صوبے کی بہتری کے لئے کام کیا ہے اور کرتے رہینگے۔ ایک سوال پر فریال تالپورنے کہا کہ اس بیچارے شہر کراچی میں بڑے مسائل ہیں کرائم بھی کراچی کابڑا مسئلہ ہے ہم ہر پیشی پر عدالت جاتے ہیں یقین ہے کہ کوئی جرم نہیں کیا۔فریال تالپور نے چیئرمین نیب کی وڈیو کے معاملے پرکوئی تبصرہ کرنے سے گریز کیا۔ایک سوال پر فریال تالپور نے کہا کہ پہلی مرتبہ سناہے کہ سندھ پولیس آزاد ہے کراچی میں اسٹریٹ کرائم کی وارداتیں ہیں صوبے اور شہر کی بہتری کیلیے کام کرناہے کچی شراب گھروں میں بنتی ہے خاندانوں اور گھروں میں کچی شراب اور گٹکا کی وباہے گٹکا بنانے فروخت کرنیوالے پکڑے جاتے ہیں مگر آزاد ہوجاتے ہیں گٹکا کچی شراب کے کام کرنیوالے ایک سے دوسرے شہرمیں اپنادھندہ منتقل کردیتے ہیں گٹکا کچی شراب کیخلاف سول سوسائٹی کے ساتھ ملکر کام کرناہے۔ قائمہ کمیٹی کے آئندہ اجلاس میں گٹکا کچی شراب پر آئی جی پولیس کوبھی بلایاہے قائمہ کمیٹی داخلہ کی کوشش ہوگی کہ حکومت اور پولیس کے درمیان پل کاکردار ادا کرے۔

مزید : صفحہ اول


loading...