انگلینڈ میں قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کی ’کلاس‘ مگر کیوں اور کہاں؟ سب پتہ چل گیا

انگلینڈ میں قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کی ’کلاس‘ مگر کیوں اور کہاں؟ سب پتہ چل گیا
انگلینڈ میں قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کی ’کلاس‘ مگر کیوں اور کہاں؟ سب پتہ چل گیا

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) آئی سی سی ورلڈکپ میں شریک پاکستانی کرکٹرز کو کرپشن سے بچنے اور سٹہ بازوں سے دور رہنے کا سبق یاد دلا دیا گیا اور اس مقصد کیلئے ایک خصوصی ’کلاس‘ کا انعقاد ہوا جس میں آئی سی سی کے دو آفیشلز نے کھلاڑیوں اور ٹیم انتظامیہ کے اراکین کو تفصیلی بریفنگ دی۔

تفصیلات کے مطابق آئی سی سی کے ہر بڑے ایونٹ میں اربوں روپے کا جواءکھیلا جاتا ہے اور بک میکرز اپنی رقم محفوظ رکھنے کیلئے کھلاڑیوں کو بھی آلہ کار بنانے کی کوشش کرتے رہتے ہیں تاہم اس مرتبہ میگا ایونٹ کو کرپشن سے پاک بنانے کیلئے تمام تر اقدامات بروئے کار لائے جا رہے ہیں اور خاصی سختی برتی جا رہی ہے۔

تمام ٹیموں سمیت پاکستانی ٹیم کے ساتھ بھی آئی سی سی کے 2 سیکیورٹی اینڈ اینٹیگریٹی آفیسرز موجود ہیں جبکہ پی سی بی کی جانب سے میجر (ر) اظہر نمائندگی کر رہے ہیں جو ٹیم کیساتھ رہیں گے۔ گزشتہ دنوں کونسل نے اعلان کیا تھا کہ ورلڈکپ میں شریک کسی کھلاڑی کیخلاف کوئی تحقیقات نہیں ہو رہیں اور میگا ایونٹ سٹے بازوں سے مکمل محفوظ ثابت ہوگا،اس حوالے سے کھلاڑیوں کو تعلیم دینے کا سلسلہ جاری ہے۔

ذرائع کے مطابق مقامی ہوٹل میں کونسل کے 2 آفیسرز نے پاکستان کے تمام کھلاڑیوں اور آفیشلز کو بریفنگ دی۔ایک خاتون اور ایک مرد آفیشل نے سب سے پہلے 7 منٹ کی ایک ویڈیو دکھائی جس میں انہیں بتایا گیا کہ مذموم مقاصد کیلئے کھیل کی ساکھ خراب کرنے والے لوگ ورلڈکپ کو بھی نشانہ بنانا چاہیں گے لہٰذا ان سے محفوظ رہنے کی کوشش کریں، سٹے باز پرستار بن کر بھی مل سکتے ہیں،اگر کوئی بھی شخص مشکوک لگے تو فوراً اپنے ساتھ موجود آئی سی سی کے آفیشل کو آگاہ کریں، سوشل میڈیا پر بھی اجنبی افراد سے بات کرتے ہوئے محتاط رہیں۔

کھلاڑیوں کو بکیوں کے طریقہ کار سے آگاہ کیا گیا، سابق زمبابوین کرکٹرگریم کریمر کی ویڈیو بھی دکھائی گئی جس میں وہ بتاتے ہیں کہ کس طرح سینئر بورڈ آفیشل راجن نائر نے 2017ءکے ویسٹ انڈیز ٹور میں ٹیسٹ سیریز فکسڈ کرنے کیلئے ان کو 30 ہزار ڈالرزکی پیشکش کی تھی۔

کریمر نے ٹیم منیجر ہیتھ سٹریک کو بتایا جو معاملہ آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ کے علم میں لائے اور پھر تحقیقات کے دوران راجن نے اپنا جرم قبول کر لیا جس پر انہیں 20 سال پابندی کی سزا سنائی گئی۔ پاکستانی کرکٹرز سے کہا گیا ہے کہ اگر ان کے ساتھ بھی کبھی ایسا ہو تو فوراً بتائیں جبکہ 2بھارتی بکیوں کی کی تصاویر دکھا کر ان سے دور رہنے کی ہدایت بھی دی گئی ہے۔

مزید : کھیل


loading...