رمضان المبارک رحمتوں اور برکتوں والا مہینہ ہے: خالد حسین چودھری

رمضان المبارک رحمتوں اور برکتوں والا مہینہ ہے: خالد حسین چودھری
رمضان المبارک رحمتوں اور برکتوں والا مہینہ ہے: خالد حسین چودھری

  



دبئی (طاہر منیر طاہر) ماہ رمضان کے آغاز سے ہی امارات بھر میں افطاریوں کا سلسلہ جاری ہے ۔ ہر سال کی روایت کو برقرار رکھتے ہوئے پاکستان سوشل سنٹر شارجہ کے صدر چودھری خالد حسین نے اپنے دوستوں کے اعزاز میں افطاری کا اہتمام کیا جس میں قونصلیٹ جنرل آف پاکستان دبئی کے سٹاف نے بھی شرکت کی جبکہ پاکستانی کمیونٹی دبئی کے ہر طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والوں کو بھی مدعو کیا گیا تھا۔

پاکستان سوشل سنٹر شارجہ کے ہال میں انعقاد پذیر ہونے والے افطار ڈنر میں آنے والے تمام مہمانوں کا استعمال فرداً فرداً چودھری خالد حسین نے خود کیا جبکہ ان کے ہمراہ راجہ محمد سرفراز بھی موجود تھے جو آنے والے مہمانوں کو خوش آمدید کہہ رہے تھے۔ افطاری سے قبل ماہ رمضان کی برکتوں کے بارے اظہار خیال کرتے ہوئے تقریب کے میزبان چودھری خالد حسین نے کہا کہ ماہ رمضان ہمارے لئے اللہ تعالیٰ کی طرف سے خاص انعام ہے۔ ہمیں اس ماہ مقدس کا بھرپور فائدہ اٹھانا چاہیے اور اللہ کا قرب حاصل کرنے کے لئے اس کی مخلوق کی خدمت کرنی چاہیے۔ اللہ کے بندے خوش تو اللہ بھی راضی، لہٰذا اپنے رب کو راضی کرنے کے لئے اس کی مخلوق سے پیار ضروری ہے۔

ماہ رمضان ہمیں دوسروں کے بارے احساس کرنے کا درس دیتا ہے لہٰذا ہمیں چاہیے کہ ہم اپنی خوشیوں میں سب کو یاد رکھیں۔ افطار ڈنر میں قونصلیٹ آف پاکستان دبئی کے قونصل جنرل احمد امجد علی، سید مصور عباس شاہ، وہاب شیخ، عاشق حسین شیخ، ڈاکٹر ناصر خان، حسنین شمس اور محمد شریف خان جبکہ دیگر لوگوں میں ڈاکٹر محمد اکرم چودھری، حاجی جمیل اسحق، محمد اقبال داﺅد، محمد شبیر مرچنٹ، سہیل خاور، میاں منیر ہانس، سردار جاوید یعقوب، ذوالفقار مغل، سید وقار حسین گردیزی، سردار الطاف حسین، عرفان گوندل، خواجہ عبدالوحید پال، محمد غوث قادری، خلیل الرحمن بونیری، رضوان عبداللہ، شفیق صدیقی، سید شرافت علی شاہ، پاکستان سوشل سنٹر شارجہ کے ڈائریکٹرز محمد عمران رفیق، سفیر احمد ستی، محمد سعید اختر، فراز صدیقی اور محمد ذیشان کے علاوہ متعدد لوگوں نے شرکت کی۔

افطاری سے قبل افطار ڈنر کے میزبان چودھری خالد حسین نے افطاری کے لئے آنے والے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور مہمانوں کی تواضح پر تکلف ڈنر سے کی گئی۔

مزید : عرب دنیا


loading...