’کئی سالوں تک مجھے روزانہ دل کے 25,25 دورے پڑتے رہے‘

’کئی سالوں تک مجھے روزانہ دل کے 25,25 دورے پڑتے رہے‘
’کئی سالوں تک مجھے روزانہ دل کے 25,25 دورے پڑتے رہے‘

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) دل کا ایک دورہ ہی جان لیوا ثابت ہو سکتا ہے لیکن گزشتہ دنوں برطانیہ کے ایک سینئر صحافی نے اس حوالے سے ایسی حیران کن بات بتا دی کہ ہر سننے والا دنگ رہ گیا۔ دی مرر کے مطابق چینل فور نیوز کے سابق باس 43سالہ میٹ کین نے چینل فور نیوز ہی کی ایک ڈاکومنٹری میں بتایا ہے کہ انہیں کئی سالوں تک روزانہ 25، 25دل کے دورے پڑتے رہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ”میں دل کے ایک ایسے عارضے کا شکار تھا، جس کا مجھے علم ہی نہیں تھا اور نہ کبھی اس کی تشخیص ہوئی۔ مجھے دل کے ان دو درجن سے زائد دوروں کا بھی کبھی احساس نہیں ہوا۔ “

میٹ کین کا کہنا تھا کہ ”دن میں کئی بار ایسا ہوتا کہ میرا دماغ چکر کھا جاتا اور میری آنکھوں کے سامنے اندھیرا چھا جاتا۔ میری حالت نیم بے ہوشی والی ہو جاتی اور میرا دل کرتا کہ میں فوراً کہیں لیٹ جاﺅں۔ میں سمجھتا کہ شاید کام کی زیادتی یا دماغی کمزوری کی وجہ سے ایسا ہوتا ہے لیکن کئی سال بعد جب دل کے اس مرض کی تشخیص ہوئی تو ڈاکٹروں نے بتایا کہ مجھے کئی سال سے روزانہ دو درجن سے زائد دل کے دورے پڑ رہے ہیں۔ تشخیص کے بعد لندن کے نیشنل ہسپتال فار نیورالوجی میں میرا علاج ہوا اور اب میں کافی حد تک صحت مند ہوچکا ہوں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ