پیپلزپارٹی نے چیئر مین نیب کے معاملے پر حکومتی تحقیقات کوتسلیم کرنے سے انکار کردیا

پیپلزپارٹی نے چیئر مین نیب کے معاملے پر حکومتی تحقیقات کوتسلیم کرنے سے انکار ...
پیپلزپارٹی نے چیئر مین نیب کے معاملے پر حکومتی تحقیقات کوتسلیم کرنے سے انکار کردیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پیپلز پارٹی کی رہنمانفیسہ شاہ نے کہاہے کہ جو ویڈیو لیک ہواہے ، اگر اس میں حراسانی ثابت ہوتی ہے تو اس معاملے کی بھی انکوائری ہونی چاہئے جو پارلیمنٹ کے ذریعے ہو، حکومت انکوائری نہیں کرسکتی کیونکہ حکومت پر تو خود الزام ہے اور نہ ہی ہم حکومت کی انکوائری کوتسلیم کریں گے ۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے نفیسہ شاہ نے کہاہے کہ حکومت کو جو خطرہ ہوتاہے ، وہ اندر سے ہوتاہے ، یہ اتنی کمزور حکومت ہے جس کی نو ماہ میں بھی کوئی سمت طے نہیں ہوسکی ۔ انہوں نے کہا کہ پارلیمان میں اپوزیشن میں ہم آہنگی ہے ، پارلیمنٹ کے باہر ہر پارٹی کے اپنے کارکن ہیں ، مریم اور بلاول اپنے کارکنوں سے خطاب کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کے درمیان یہ فیصلہ ہوچکاہے کہ عید کے بعد اے پی سی ہوگی جس میں تفصیلات طے ہو نگی ۔

ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ دنوں جب چیئرمین نیب کا ویڈیو سیکنڈل آیاتو پیپلز پارٹی نے اس پر سیاست نہیں کی ،ہمارا پارٹی کا موقف یہ ہے کہ چیئر مین نیب کے معاملے کی پارلیمنٹ کے ذریعے تحقیقات ہونی چاہئے ، اس کا دوسرا پہلو بھی ہے ، وہ یہ ہے کہ جو ویڈیو لیک ہواہے ، اگر اس میں حراسانی ثابت ہوتی ہے تو اس معاملے کی بھی انکوائری ہونی چاہئے جو پارلیمنٹ کے ذریعے ہو۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملے کی حکومت انکوائری نہیں کرسکتی کیونکہ حکومت پر تو خود الزام ہے اور نہ ہی ہم حکومت کی انکوائری کوتسلیم کریں گے ۔

مزید : قومی