”مجھے نہیں لگتا کہ یہ منصوبہ قابل عمل ہے“ پاکستان اور انگلینڈ کی سیریز بھارتیوں کو ’ستانے‘ لگی

”مجھے نہیں لگتا کہ یہ منصوبہ قابل عمل ہے“ پاکستان اور انگلینڈ کی سیریز ...
”مجھے نہیں لگتا کہ یہ منصوبہ قابل عمل ہے“ پاکستان اور انگلینڈ کی سیریز بھارتیوں کو ’ستانے‘ لگی

  

بنگلور (ڈیلی پاکستان آن لائن) انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ (ای سی بی) اور پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے بائیو سیکیور ماحول میں ٹیسٹ اور ٹی 20 سیریز کرانے کی تیاریاں شروع کر دی ہیں جو بھارتیوں کو ایک آنکھ نہیں بھا رہیں۔

بھارت کے سابق کرکٹر راہول ڈریوڈ نے ’بائیوسیکیور‘ کرکٹ کو غیرحقیقی قرار دیدیا ہے جن کا کہنا ہے کہ مجھے نہیں لگتا کہ ای سی بی کا یہ منصوبہ قابل عمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر وہ اس طرح کا بائیو ببل تیار کرنے کے قابل بھی ہیں تو ہر کسی کیلئے ایسا کرنا ممکن نہیں ہوگا کیونکہ اس میں بہت سی چیزیں اور لوگ شریک ہوتے ہیں۔

راہول ڈریوڈ کا کہنا تھا کہ مجھے امید ہے کہ جب ہم اس وائرس کی ویکسین بنالیں گے تو سب چیزیں بہتر ہونا شروع ہوجائیں گی۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) خود اسی طرح کے ماحول میں ناصرف آسٹریلیا کیخلاف ٹیسٹ سیریز کھیلنا چاہتا ہے بلکہ ٹی 20 ورلڈکپ کے التواءکے ذریعے انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) کیلئے بھی راہیں ہموار کی جا رہی ہیں۔

مزید :

کھیل -