عمران خان کی جانب سے مذاکرات کی پیشکش مسترد کرتے ہیں، حکومت نے واضح کردیا

عمران خان کی جانب سے مذاکرات کی پیشکش مسترد کرتے ہیں، حکومت نے واضح کردیا
عمران خان کی جانب سے مذاکرات کی پیشکش مسترد کرتے ہیں، حکومت نے واضح کردیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے عمران خان کی جانب سے مذاکرات کی پیشکش کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب ہم کہتے تھے مذاکرات ہونے چاہیئں تو آپ کہتے تھے این آر او نہیں دوں گا، اب ہم آپ کے ساتھ مذاکرات نہیں کرسکتے۔ آپ کو این آر او نہیں ملے گا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ آپ کی تیاری اتنی تھی کہ جلسی تک نہیں کرسکے، سرکاری املاک کو نقصان پہنچانا کوئی جمہوری حق نہیں، خونیں مارچ کا اعلان کرنا کوئی جمہوری حق نہیں۔ اگر پرامن احتجاج کی کال دی تھی تو اسلحہ، ڈنڈے اور گولیاں کیوں جمع کیں، پولیس پر تشدد کیوں کیا، آپ کی تیاری پولیس والوں کے سر پھاڑنے اور سرکاری املاک کو آگ لگانے کی تھی، آپ کی تیاری اب 100 سال تک بھی نہیں ہوسکتی، آپ 100 سال تیاری کریں اب پاکستان کے عوام آپ کے ساتھ نہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ پاکستان کے عوام آپ کو مسترد کر چکے ہیں کیونکہ نہ آپ 1 کروڑ نوکریاں اور 50 لاکھ گھر دے سکے اور نہ ہی ریاست مدینہ بنا سکے تو اقتدار کیوں چاہیے؟ سانحہ ماڈل ٹاؤن کا فیصلہ ہو چکا، اگر اس میں ابہام تھا تو آپ 4سال حکومت میں تھے کیوں اس کو ایسے ہی چھوڑ دیا اور تحقیقات نہیں کروائیں؟مریم اورنگزیب نے کہا کہ روزانہ اپنی ناکامی کا ماتم کرنے سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ پاکستانی عوام آپ سے سوال پوچھتے ہیں کہ آپ جو باتیں کر رہے ہیں وہ 4 سال میں کیوں نہیں کیا؟ آخر کیوں دوبارہ اقتدار چاہتے ہیں اور کہتے ہیں کہ دوتہائی اکثریت نہ ہوئی تو دوبارہ الیکشن کراؤں گا۔

مزید :

قومی -