روس پرپابندیاں ناگزیر،یوکرائنی تنازعے کا واحد حل سفارتکاری ہے، جرمن چانسلر

روس پرپابندیاں ناگزیر،یوکرائنی تنازعے کا واحد حل سفارتکاری ہے، جرمن چانسلر

  

جرمن(این این آئی) جرمن چانسلر انگیلا میرکل نے کہا ہے کہ یوکرائن کے تنازعے کا واحد حل سفارتکاری سے ہی ممکن ہے۔ ،میڈیارپورٹس کے مطابق جرمن چانسلر میرکل نے پارلیمنٹ سے خطاب کرتے ہوئے اس عزم کا اظہار کیا کہ ان کی حکومت یوکرائن کے تنازعے کے حل کے لیے سفارتکاری کا راستہ اختیار کیے رکھے گی، انہوں نے کہا کہ یہ مسئلہ صرف پرامن مذاکرات کے ذریعے ہی حل ہو سکتا ہے اور برلن حکومت روسی حکام کے ساتھ مل کر اس تنازعے کا حل نکال لے گی۔ چانسلر میرکل نے یوکرائن تنازعے کے حل کے لیے اپنی حکمت عملی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ یہ راستہ شاید طویل اور پیچیدہ ہو لیکن میں قائل ہوں کہ ہم اپنے اہداف حاصل کر لیں گے۔ انہوں نے روس پر اقتصادی پابندیوں کو ناگزیر قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کا مقصد دراصل یوکرائن کی خودمختاری اور سالمیت کو یقینی بنانا ہے۔ جرمن چانسلر میرکل نے مشرقی یوکرائن میں قیام امن کو یقینی بنانے کے حوالے سے کہا،کہ ہمیں صبر سے کام لیتے ہوئے مستقل مزاج رہنا ہو گا، انہوں نے روسی حکومت پر یہ الزام بھی عائد کیا کہ اس خطے میں کریملن کی پالیسیوں نے یورپ کی سلامتی کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔ میرکل نے دہرایا کہ روسی حکومت بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کی مرتکب ہو رہی ہے، مشرقی یوکرائن میں اپریل سے شروع ہونے والے بحران کے نتیجے میں چار ہزار افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -