اسرائیل پوری دنیا کی مخالفت کر رہا یے جنوبی افریقہ

اسرائیل پوری دنیا کی مخالفت کر رہا یے جنوبی افریقہ

  

                                 پریٹوریا(بیورورپورٹ)جنوبی افریقہ کے صدر جیکب زوما نے کہا ہے کہ اسرائیل اپنی آبادکاری کی پالیسی کے ذریعے فلسطینی تنازعے کے دوریاستی حل کو نقصان پہنچا رہا ہے اور اس طرح پوری دنیا کی مخالفت کا مرتکب ہورہا ہے۔انھوں نے یہ کلمات فلسطینی صدر محمود عباس کی جنوبی افریقہ کے سرکاری دورے پر دارالحکومت پریٹوریا میں آمد کے موقع پر مشترکہ نیوزکانفرنس میں کہے ۔انھوں نے کہا کہ ''اس وقت حقیقت یہ ہے دنیا کی اکثریت تنازعے کے دوریاستی حل سے متفق ہے لیکن ہمیں ایک ایسے ملک سے مسئلہ درپیش ہے جو ان سب ممالک کی مخالفت کررہا ہے۔انھوں نے اپنے اس مطالبے کا اعادہ کیا کہ یہودی آبادکاری کی تمام سرگرمیوں پر مکمل طور پر پابندی عائد کی جائے''۔انھوں نے اقوام متحدہ کے کام کرنے کے طریق کار کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ میرا نہیں خیال کہ سسٹم کو صرف ایک ملک کو پوری دنیا کی مخالفت کی اجازت دینی چاہیے۔صدر جیکب زوما کا کہنا تھا کہ جنوبی افریقہ اسرائیل اور فلسطین کے درمیان مذاکرات میں مدد دینے کو تیار ہے اور اس نے اس مقصد کے لیے ماضی میں اپنے دو خصوصی نمائندوں کا تقرر بھی کیا تھا۔اس موقع پر صدر محمود عباس نے کہا کہ فلسطینی ایک آزاد ریاست کے قیام کے لیے جنوبی افریقہ کے کامیاب تجربے سے استفادہ کرنا چاہتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ''ہم اس وقت دنیا کی آخری قوم ہی رہ گئے ہیں جو ابھی تک قبضے کے تحت رہ رہے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -