پی ٹی آئی کے کارکنوں کی پکڑ دھکڑ انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی ہے ، نصیر احمد

پی ٹی آئی کے کارکنوں کی پکڑ دھکڑ انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی ہے ، نصیر احمد

  

لاہور( نمائندہ خصوصی) تحریک انصاف کے کارکنوں کی پکڑ دھکڑ اور گھروں پر پولیس کے ریڈ انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی اور ریاستی دہشت گردی ہے ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلز پارٹی انسانی حقوق ونگ لاہور کے صدر نصیر احمد، عمر حیات تبسم، شیخ علی سعید ،عثمان الحق قریشی ، یاسمین فاروق نے اپنے مشترکہ بیان میں کہی انہوں نے کہا کہ پر امن احتجاج ہر سیاسی جماعت کا جمہوری اور آئینی حق ہے اور حکومتی پالیسیوں کے خلاف احتجاج جمہوریت کا حسن ہے لیکن مسلم لیگ ن کی حکومت تحریک انصاف کے گھروں پر چھاپے اور گرفتاریاں کرکے احتجاج کا حق چھین رہی ہے اور گرفتاریاں کرکے آمریت کی یاد تازہ کر رہی ہے ۔   پیپلز پارٹی انسانی حقوق ونگ ہر قسم کی غیر جمہوری سوچ اور ریاستی دہشت گردی کی مذمت کر تی ہے کارکنوں کے گھروں پر چھاپے اور نہ ملنے پر کارکنوں کے اہلخانہ سے بد تمیزی غیر جمہوری فعل ہے مسلم لیگ ن کی حکومت کو کھلی ذہنیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے تحریک انصاف کو30نومبر کا جلسہ کرنے کی کھلی اجازت دینا چاہئے اور اگر کوئی پرامن احتجاج کی بجائے جلاؤ گھیراؤ کرے تو تب ریاستی مشینری استعمال کرنا چاہئے انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کا احتجاج اس مکافات عمل کا حصہ ہے جو شہباز شریف وزیر اعلیٰ ہوتے ہوئے بھی مرکزی حکومت کیخلاف قومی بحرانوں پر جلوس نکالتے تھے اور مینار پاکستان پر نمائشی کیمپ لگاتے تھے مسلم لیگ ن نے سابق دور حکومت میں جسطرح کے طرز سیاست کو فروغ دیاہے آج وہ طرز سیاست ان کے سامنے آرہا ہے مسلم لیگ ن سرکاری ملازمین کے ساتھ اور اخبارات میں اشتہارات دے کر جب جلوس نکالتی ہے تو اس احتجاج کو حق سمجھتی ہے اور جب دیگر اپوزیشن جماعتیں احتجاج کریں تو اسے فسادات کا نام دیتے ہیں مسلم لیگ ن اپنی دوغلی پالیسیوں سے بحرانوں کا شکار ہوئی ہے انہوں نے سیاسی جماعتوں کے کارکنوں کے گھروں پر چھاپے اور گرفتاریوں کو بلا جواز قرار دیتے ہوئے اس عمل کو بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -