شہبا ز شریف کابلوچستان میں امراض قلب کا ہسپتال بنانے کا وعدہ وفا نہ ہو سکا

شہبا ز شریف کابلوچستان میں امراض قلب کا ہسپتال بنانے کا وعدہ وفا نہ ہو سکا

  

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیر اعلیٰ پنجاب کابلوچستان کی عوام سے امراض قلب کا ہسپتال بنانے کا وعدہ وفا نہ ہونے کے باعث کوئٹہ کا رہائشی لاہور پریس کلب کے سامے احتجاج کے لئے پہنچ گیا۔خادم اعلیٰ پنجاب بلوچستان کی عوام سے کیا جانے والا وعدہ پورا کریں۔کوئٹہ سے تعلق رکھنے والا جماعت اسلامی کا رہنما عبدالقیوم کاکڑ نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان صحت اور تعلیم کے حوالے سے انتہائی پسماندہ صوبہ ہے۔تعلیم اور صحت کے مراکز نہ ہونے کے باعث صوبہ بھر کی عوام محرومیوں کا شکار ہیں،2009میں وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے کوئٹہ آمد پر بلوچستان کی عوام سے امراض قلب کا خصوصی ہسپتال بنانے کا وعدہ کیا تھااور کہا تھا کہ یہ ہسپتال پنجاب کی طرف سے بلوچستان کو جذبہ خیر سگالی کے طور پر ہو گا جس کی بدولت صوبوں میں بھائی چارے اور پیار کی فضاءپیدا ہو گی۔عبدا لقیوم کاکڑ کا کہنا ہے کہ پانچ سال کا عرصہ گزرنے کے باوجود یہ وعدہ وفا نہ ہو سکا اور اس حوالے سے گزشتہ سال وزیر اعلیٰ پنجاب سے وفد کے ہمراہ مل بھی چکا ہوں جسمیں خادم اعلیٰ پنجاب نے اپنا وعدہ نبھانے کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا کہ جلد ہی ہسپتال کی تعمیر کا مرحلہ شروع کیا جائے گا جو آج تک نہ ہو سکا اور خادم اعلیٰ پنجاب کو بلوچی عوام سے کیا جانے والا وعدہ دوبارہ یاد کروانے یہاں آیا ہوں۔ عبدالقیوم کاکڑ کا کہنا ہے اس اہم مسلے کے حوالے سے وزیر اعظم پاکستان میاں نوز شریف کو خط لکھ چکا ہوں جبکہ وزیر اعلیٰ بلوچستان سے معتدد بار ملاقات بھی کر چکا ہوں مگر اس عوامی بھلائی کے منصوبے کی طرف کوئی پیش رفت نہیں ہوئی۔انکا مزید کہنا تھا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب کو بلوچی عوام سے کیا جانے وعدہ دوبارہ یاد دلاتا ہوں جسے جلد پورا کرتے ہوئے بلوچستان کی عوام کو احساس محرومی کا ازالہ کیا جائے

 وعدہ وفا نہ ہو سکا

مزید :

علاقائی -