قلعہ گجر سنگھ، رکشہ ڈرائیور کے قاتلوں کی عدم گرفتاری پر ورثا کا پولیس کے خلاف احتجاج

قلعہ گجر سنگھ، رکشہ ڈرائیور کے قاتلوں کی عدم گرفتاری پر ورثا کا پولیس کے خلاف ...

  

لاہور(کرائم سیل)تھانہ قلعہ گجر سنگھ کے علاقہ بوڑھ والا چوک میں ٹرو کے دن قتل ہونے والے 21 سالہ رکشہ ڈرائیورکے قاتلوں کی عدم گرفتاری پر ورثا نے پولیس کے خلاف احتجاج کیا ۔تفصیلات کے مطابق بادامی باغ داتا نگر پیکو روڈ نزد بابا یار شاہ دربار کا رہائشی 21سالہ نذیررکشہ چلاتا تھا اور بوڑھ والہ چوک میں اپنے رشتہ داروں کے گھر میں قربانی کا گوشت دینے کے لیے جا رہا تھا کہ وہاں پر اس کو رکشہ ایک 8سالہ بچے سے ٹکڑا گیا ٹکر شدید نہیں تھی اور بچے کو معمولی زخم آئے لیکن اس کے اہل خانہ جن میں بچہ کا والد عتیق ،چاند،کافی،اور دیگر3نامعلوم افراد شامل ہیں نے نذیر کو پکڑ لیا اور شدید تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے قتل کر دیا تھا۔ نمائندہ\" پاکستان\" سے گفتگو کرتے ہوئے مظاہرین نے بتایا کہ پولیس ابھی تک مقدمہ میں نامزد تمام ملزمان کو پکڑنے میں ناکام رہی ہے اور جس فیکٹری میں مقتول پر تشدد کیا گیا تھا اس کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی ابھی تک انہیں نہیں دکھائی گئی ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ ہم نے پہلے دن جو ملزمان پولیس کے ساتھ جا کر گرفتار کروائے تھے ان کے علاوہ کسی اور کو ابھی تک گرفتار نہیں کیا گیا ہے جبکہ علاقہ کے بااثر افراد کی جانب سے ہمیں ابھی بھی دھمکیاں مل رہی ہیں اور صلح کرنے پر دباو ڈالا جا رہا ہے پولیس حکام سے اپیل ہے کہ معاملہ کی تفتیش کروا کے ہمیں انصاف فراہم کرتے ہوئے ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی جائے اس حوالے سے تھانہ قلعہ گجر سنگھ میں رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ نامزد ملزمان میں سے چند اشتہاری ہیں ان کے خلاف کارروائی کی جا رہی ہے جلد ہی گرفتار کر لیا جائے گا۔

مزید :

علاقائی -