ہائیکورٹ کا پولیس کو تحریک انصاف کے کارکنوں کی غیر قانونی گرفتاریاں روکنے کا حکم

ہائیکورٹ کا پولیس کو تحریک انصاف کے کارکنوں کی غیر قانونی گرفتاریاں روکنے کا ...

  

                                  لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب پولیس کو تحریک انصاف کے کارکنوں کی غیرقانونی گرفتاریوں سے روکتے ہوئے قرار دیا ہے کہ آئین اور قانون کے دائرہ کار میں ہر شہری کو احتجاج کا حق حاصل ہے ۔لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس محمود مقبول باجوہ نے تحریک انصاف کے رہنماﺅں اعجاز چودھری، شاہد نسیم گوندل اور گوہر نواز سندھو کی طرف سے دائر درخواستوں پر سماعت کی، درخواست گزاروں کی طرف سے مہرفیاض ایڈووکیٹ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ حکومت پنجاب اور پولیس نے تحریک انصاف کا تیس نومبر کا دھرنا ناکام بنانے کیلئے کارکنوں کی گرفتاریاں شروع کررکھی ہیں اور کارکنوں کے گھروں پر چھاپے مارے جا رہے ہیں، انہوں نے بتایا کہ آئین کے تحت ہر شہری کو مطالبات کے حق میں احتجاج کرنے کا حق حاصل ہے لہذا پولیس کو تحریک انصاف کے کارکنوں کی گرفتاریوں سے روکا جائے ، پنجاب حکومت کی طرف سے ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل شان گل نے بتایا کہ پولیس نے تحریک انصاف کا کوئی کارکن نہیں پکڑا اور نہ ہی کسی کارکن کو گرفتار کرنے کاارادہ ہے مگر جو بھی قانون کی خلاف ورزی کرے گا اس کے ساتھ قانون کے مطابق کارروائی کی جائیگی، عدالت نے تمام فریقین کے دلائل سننے کے بعد تحریک انصاف کے تینوں رہنماﺅں کی درخواستیں نمٹاتے ہوئے پنجاب پولیس کو حکم دیا کہ تحریک انصاف کے کارکنوں کو غیر قانونی طور پر گرفتار نہ کیا جائے ،عدالت نے قرار دیا کہ آئین اور قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے ہر شہری کو اپنے جائزمطالبات کے لئے احتجاج کرنے کا حق حاصل ہے۔

حکم

مزید :

علاقائی -