ٹرانسپورٹ کو انتہا پسند تنظیموں کے مذموم مقاصد کی تشہیر کیلئے استعمال کرنے والوں کیخلاف کاروائی کا فیصلہ

ٹرانسپورٹ کو انتہا پسند تنظیموں کے مذموم مقاصد کی تشہیر کیلئے استعمال کرنے ...

  

لاہور( وقائع نگارخصوصی) ۔میٹرو پولیٹن لاہور میں ٹریفک کے بہاؤ کو تیز کرنے اور اہم شاہراؤں ، دفاتر،عمارتوں اور پُلوں کے نیچے بھیک مانگنے کی آڑ میں معصوم شہریوں کو لوٹنے اورسکیورٹی خدشات کا باعث بننے والوں کے ساتھ ساتھ چندانتہاپسند تنظیموں کی طرف سے رِکشوں،ویگنوں اور دیگر ٹرانسپورٹ کواپنے مذموم مقاصد کی تشہیر کیلئے استعمال کرنے والے عناصر کے خلاف سخت ترین کارروائی کیلئے آئی جی پنجاب نے سی ٹی اولاہور کو 6 پٹرولنگ مو با ئل فراہم کی ہیں جو شہر بھر میں 24گھنٹے پٹرولنگ کرینگی تاکہ سڑکوں کے اطراف میں غیر ضروری پارکنگ اور دیگر تجاوزات کو ختم کیا جاسکے اور عوام اپنی منزل مقصود پر بروقت پہنچ سکیں۔CTOلاہور ،طیب حفیظ چیمہ نے آئی جی پنجاب کو بتایا کہ انہوں نے اب تک رِکشاؤں اور ویگنوں کے پیچھے کچھ تنظیموں کے اشتہار اور نعروں والے تقریباً1600فلیکس قبضے میں لیکر کارروائی شروع کرد ی گئی ہے ۔آئی جی پنجاب نے CTOکو مزید کہا کہ وہ اہم شاہراؤں اور پُلوں کے نیچے بھیک مانگنے والوں کے ساتھ ساتھ سڑکوں کے کناروں پر ریڑھیاں لگا کر ٹریفک میں خلل ڈالنے والے عناصر کے خلاف بھی کارروائی کریں اس کے علاوہ لاہور کو مختلف حصوں میں تقسیم کرکے ان 6پٹرولنگ موبائلوں کے ذریعے پٹرولنگ کروائیں اور ایک پٹرولنگ موبائل میں 1انسپکٹر اور اس کے ساتھ وارڈنز کو بھی شامل کیا جائے تاکہ پورے شہر میں ٹریفک کے بہاؤ کو تیز کرکے عوام کو ریلیف فراہم کیا جاسکے بلکہ کالے شیشے ، نیلی بتی، غیر قانونی سرکاری نمبر پلیٹ والی گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کے خلاف بھی کارروائی میں تیزی لائی جاسکے۔CTOلاہور نے آئی جی پنجاب کو بتایا کہ انہوں نے گزشتہ6ہفتوں کے دوران کالے شیشوں والی 15924گاڑیاں،بغیر نمبر پلیٹ والی 8344،غیر نمونہ نمبرپلیٹ والی16600گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کے خلاف کارروائی کی ہے۔آئی جی پنجاب نے CTOلاہور کوبراہِ راست خود شہر کی مانیٹرنگ کرنے کے احکامات جاری کئے ہیں۔

اور اس کے علاوہ لاہور میں پارکنگ کمپنیز سے بھی مستقل رابطہ جاری رکھنے کی ہدایات دیں ہیں تاکہ پارکنگ کمپنیز اورٹریفک پولیس کے ہاہمی تعاون سے ٹریفک کو ایک ضابطے میں لایا جاسکے۔

مزید :

علاقائی -