30 نومبر کا دن بھی خیریت سے گزر جائے گا،چو دھر ی محمد سرور

30 نومبر کا دن بھی خیریت سے گزر جائے گا،چو دھر ی محمد سرور

  

لاہور(نمائندہ خصوصی )گورنر پنجاب چو دھر ی محمد سرور نے کہا ہے کہ 30 نومبر بھی انشاءاللّٰہ خیریت سے گذر جائے گا ، تمام مسائل کا حل مذاکرات کی میز پر افہام و تفہیم کی فضا میں حل ہو سکتا ہے میرا شروع سے ہی یہ موقف رہا ہے کہ دونوں فریقین لچک کا مظاہرہ کرتے ہوئے مذاکرات سے اہم ایشوز حل کریں علم کا حصول ہی ہمیں خوشحالی کی منزل تک لے جا سکتاہے موجودہ دور میں وہی قومیں ترقی کے سفر میں سب سے آگے ہیں جو اپنے علمی خزا نے کی طاقت سے کام لینا جانتی ہیں - پاکستان نے ہمیں بہت کچھ دیا ہے ‘اب وقت آگیا ہے کہ ہم پاکستان کے لےے کچھ کر کے دکھائیں اور یہ ہماری اجتماعی ذمہ داری ہے کہ ہم نوجوانوں کو ایسا تعلیمی معیار مہیا کریں کہ وہ بیرون ملک تعلیم حاصل کرنے کی بجائے اپنے ملک میں تعلیم حاصل کرنے کو ترجیح دیں اور فخر محسوس کریں -ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے یونیورسٹی آف ویٹرنری اینڈ اینیمل سائنسز کے چھٹے کانووکیشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا -گورنر پنجاب نے کہا کہ پاکستانی قوم کسی سے کم نہیں ، محنت اور لگن کا جذبہ جاری رہا تو ہمیں ترقی یافتہ ممالک کی صف میں شامل ہونے سے کوئی نہیں روک سکتا - انہو ںنے کہا کہ پاکستان ک نوجوان طبقہ ہمارے روشن مستقبل کی ضمانت ہے ، ہماری نوجوان نسل محنتی ، فرض شناس اور جذبہ حب الوطنی سے سرشار ہے- درےں اثنائگورنرپنجاب چو دھر ی محمد سرورنے پاکستان میں یورپی یونین کے سفیر لارس گنر وج مارک سے گفتگو کہتے ہوئے کہا کہ پاکستان ایک ذمہ دارملک ہے جس نے عالمی امن کے لےے گراں قدرقربانیاںدی ہیں اور پوری دنیادہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کے کردارکوبےحد سراہتی ہے - انہوںنے کہا کہ دہشت گردی کےخلاف جنگ نے پاکستان کی معیشت کوشدید نقصان پہنچایا ہے اور پاکستان کے ساتھ اقتصادی شعبے میں تعاون کا فروغ ہی معیشت کی بحالی کا بہترین طریقہ ہے - گورنر پنجاب نے کہا کہ موجودہ حکومت ملک کو معاشی بحران سے نکالنے کے لےے ہرممکن اقدامات کر رہی ہے اور اس حوالے سے سرمایہ کار دوست پالیسیوں کو تشکیل دیا جا رہاہے -انہوں نے کہا کہ حکومت کی اقتصادی ٹیم کی مدبرانہ اقتصادی پالیسوں کی بدولت غیر ملکی سرمایہ کار پاکستان میں سرمایہ کاری میں دلچسپی لے رہے ہیں جنہیں تمام ضروری سہولتیں فراہم کی جا رہی ہیں - انہوںنے کہاکہ یورپی منڈیوں میں جی ایس پلس سٹیٹس کاحصول ایک اہم سنگ میل ہے جس سے ہمارے تاجروں کو خاطرخواہ فائدہ ہو گا، صرف ٹیکسٹائل سیکٹر میںاس موقعے سے فائدہ اٹھاکر اپنی برآمدات کو تیرہ ارب ڈالر سے چھبیس ارب ڈالر تک بڑھایا جا سکتا ہے-

چو دھر ی سرور

مزید :

صفحہ آخر -