جماعةالدعوة کے اجتماع کی تیاریاں تیز ، تشہیری مہم شروع فلوٹس کا گشت سپیکروں سے شرکت کی دعوت

جماعةالدعوة کے اجتماع کی تیاریاں تیز ، تشہیری مہم شروع فلوٹس کا گشت سپیکروں ...

  

                                   لاہور(سٹاف رپورٹر) جماعةالدعوة پاکستان کے زیر اہتمام4، 5دسمبر کو مینار پاکستان گراﺅنڈ میں ہونے والے دو روزہ اجتماع کی تیاریاں تیز کر دی گئیں۔ملک بھر کی طرح صوبائی دارالحکومت لاہور میں بھی بھرپور تشہیری مہم چلائی جارہی ہے۔ مساجد و مدارس، گلی محلوں، چوکوں و چوراہوں اوراہم شاہراہوں پر ہزاروں کی تعداد میں اشتہارات، بینرزاور ہورڈنگز لگائے جارہے ہیں ۔ صوبائی دارالحکومت لاہور میں دینی مدارس، سکولز، کالجز، یونیورسٹیز کے طلباء، وکلاءاور تاجروں سمیت تمامتر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد میں اجتماع میں شرکت کے حوالہ سے زبردست جوش و جذبہ پایا جاتا ہے۔ جماعةالدعوة کے کارکنان لاﺅڈ سپیکرز کے ذریعہ اعلانات کر کے عوام الناس کو اجتماع میں شرکت کی دعوت دے رہے ہیں۔ اسی طرح درجنوں فلوٹس خصوصی طور پر تیار کئے گئے ہیں جن پر اجتماع کے حوالہ سے تشہیری بورڈ اور لاﺅڈ سپیکرز لگائے گئے ہیں۔فلوٹس کے ذریعہ جماعةالدعوة کے کارکنان پورے شہر کے کونے کونے میں اجتماع کی تشہیری مہم چلارہے ہیں اور اعلانات کئے جارہے ہیں۔ جماعةالدعوة پاکستان کے رہنماﺅں کا کہنا ہے کہ اجتماع میں طلبائ، وکلاء، تاجروں اور سول سوسائٹی سمیت تمامتر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد شرکت کریں گے۔دریں اثناءجماعة الدعوة لاہورکے امیر مولانا ابوالہاشم نے اجتماع کی تیاریوں کے سلسلہ میںلاہور میں مختلف مقامات پرکارنر میٹنگز سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مینار پاکستان گراﺅنڈ میں ہونے والے اجتماع میں ملک بھر سے تمام مکاتب فکر اور شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد شرکت کریں گے۔جماعة الدعوة کے کارکنان گھر گھر جا کر اجتماع کی دعوت دے رہے ہیں ۔مینار پاکستان گراﺅنڈ میں تاریخی اجتماع یہ ثابت کرے گا کہ پاکستان کلمہ طیبہ کے نام پر بنا اور اسی پر قائم رہے گا۔سیکولر اور ملک دشمن قوتوں کی وطن عزیز کے خلاف سازشیں کبھی کامیاب نہیں ہوں گے۔ مولانا ابوالہاشم نے بتایا کہ اجتماع میں شرکت کے لئے ملک بھر کی طرح صوبائی دارالحکومت لاہور میںبھی بھر پور مہم چلائی جارہی ہے۔اجتماع کو کامیاب بنانے کے لئے ہر قسم کے وسائل اور ذرائع استعمال کئے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سیکولرازم کو فروغ دینے کیلئے باقاعدہ تحریک شروع کی گئی ہے۔ پاکستان کے اسلامی تشخص کو ختم کرنے کی سازشیں کی جارہی ہیں۔ یہ ملک لاالہ الااللہ کی بنیاد پر لاکھوں مسلمانوں کی قربانیاں دیکرحاصل کیا گیا تھا مگر افسوس کہ آج اسی نظریاتی ملک میں ہندوﺅانہ رسوم ورواج پروان چڑھایا جارہا ہے۔ یہ انتہائی افسوسناک بات اور پوری قوم کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی نظریاتی اساس کو منہدم کرنے کی تمام کوششیں ناکام بنائیں گے

 اجتماع کی تیاریاں

مزید :

صفحہ آخر -