پولیو ورکرز کا بہیمانہ قتل عالمی ادارہ صحت نے بلوچستان میں دفاتر بند کر دئیے

پولیو ورکرز کا بہیمانہ قتل عالمی ادارہ صحت نے بلوچستان میں دفاتر بند کر دئیے ...

  

                    کوئٹہ: (خصوصی رپورٹ )کوئٹہ میں بدھ کے روز مشرقی بائی پاس کے علاقے میں دو نامعلوم موٹر سائیکل سواروں کی فائرنگ کا نشانہ بن کر جان بازی ہارنے والے تین پولیو ورکرز کو کوئٹہ جبکہ ایک کو مستونگ میں سپرد خاک کر دیا گیا ہے۔ پولیو ٹیم پر فائرنگ کے بعد ڈبیلو ایچ او نے بلوچستان میں اپنے تمام دفاتر بند جبکہ یونیسف نے اپنی سرگرمیاں محدود کر دیں ہیں۔ دوسری جانب آئی جی پولیس بلوچستان نے غفلت برتنے پر متعلقہ تھانے کے ڈی ایس پی شفقت امری جنجوعہ اور ایس ایچ نور بخش مینگل کو معطل کرکے رپوٹ طلب کر لی ہے ،پولیو ورکرز جہاں ایک طرف اپنی زندگیاں گنوا رہے ہیں تو وہیں حکومتی ناقص منصوبہ بندی کے باعث وہ شدید مالی مشکلات سے بھی دوچار ہیں۔ حکومت کی جانب سے 9 سو سے زائد ورکرز کو مستقل کئے جانے کے باوجود بیشتر ورکرز کو گزشتہ کئی ماہ تنخواہیں بھی نہیں ملی، ڈی ایچ او کا کہنا ہے کہ جلد ہی تنخواہوں کا معاملہ حل ہو جائے گا۔

پولیو ورکرز

مزید :

صفحہ آخر -