دھرنا عمران خان کے ذاتی مفادات کی تکمیل کیلئے ہے، نواز شریف

دھرنا عمران خان کے ذاتی مفادات کی تکمیل کیلئے ہے، نواز شریف

  

اسلام آباد (خصوصی رپورٹر)وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ دھرنا عمران خان کے ذاتی مفادات کی تکمیل کیلئے ہے ،قومی مفاد سے اس کا کوئی تعلق نہیں ہے ۔انہوں نے یہ بات 18ویں سارک کا نفرنس سے واپسی کے موقع پر طیارے میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کی۔وزیر اعظم نے کہا کہ جمہوریت میں مذاکرات کا درواز ہ ہمیشہ کھلا رہتا ہے اور حکومت ہر وقت مذاکرات کے لئے تیار ہے ۔وزیر اعظم نے البتہ عمران خان کے طرز سیاست کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہ انہوں نے بھی برسوں سیاست کی ہے اور بے شمار احتجاج کئے ہیں لیکن اس طرح تمام حدیں نہیں پھلانگیں ۔انہوں نے کہا کہ یہ احتجاج پاکستان کو نقصان پہنچانے کیلئے ہے ، ہم چاہتے ہیں کہ عمران خان پارلیمنٹ میں آ کر حکومت کو سیدھی راہ پر رکھنے کی جدوجہد کریں جس کے لئے عوام نے انہیں ووٹ دیا ہے ۔ وزیر اعظم نے مزید کہاکہ لوگ پوچھتے ہیں خیبر پختونخوا میں کونسا نیا پاکستان وجود میں آیا ہے ، لوگ یہ جاننا چاہتے ہیں کہ کیا وہاں چوری ڈکیتی اور قتل و غارت کی وارداتیں ختم ہو گئیں ہیں ؟کیا وہاں ترقی عروج پر ہے ؟ ۔انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں خطرناک مجرم جیل توڑ کر بھاگ رہے ہیں ، پولیو ورکز مارے جارہے ہیں جبکہ وزیر اعلی سرکاری خرچ پر دھرنوں میں شرکت کر رہے ہیں ۔نواز شریف نے کہا کہ ہم تحریک انصاف سے کھلے مذاکرات کرنا چاہتے ہیں اور پس پردہ کوئی مذاکرات نہیں ہو رہے وزیر اعظم نے مزید کہا کہ اگرچہ دھرنے والوں نے پاکستان کی معیشت کو نقصان پہنچانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی لیکن اس کے باوجود پاکستانی معیشت ایک بار پھر ترقی کے راستے پر گامزن ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ دھرنے اپنے آخری دموں پر ہیں اور یہ سلسلہ اب تھوڑی دیر ہی چلے گا ۔وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان اپنے معاشی اہداف پورے کر نے میں کامیابی حاصل کر رہا ہے جس کا ایک ثبوت گذشتہ روز جاری کئے گئے پاکستانی سکوک بانڈز کی شاندار پذیرائی ہے انہوں نے مزید کہا کہ مہنگائی مسلسل کم ہو رہی ہے اور روز مرہ اشیاء ضروریا ت مثلاََآلو، ٹماٹر اورپیاز وغیرہ کی قیمتوں میں نمایاں کمی ہو ئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت توانائی بحران کو بھی حل کرے گی اور لوڈشیڈنگ پر بھی قابو پائے گی ۔ایک سوال کے جواب میں وزیر اعظم نے کہا کہ چین کے صدر جلد پاکستان کے دورے پر آئینگے اور میرے حالیہ دورہ چین کے دوران چینی صدر نے کہا کہ میں شدت سے پاکستان کے دورے کا منتظر ہوں اور جلد از جلد دورے کو ترتیب دیا جائے گا ۔

مزید :

صفحہ اول -