بھارت کو پاکستان سے خوف، سرحد پر جدید ٹیکنالوجی استعمال کرنے پر غور

بھارت کو پاکستان سے خوف، سرحد پر جدید ٹیکنالوجی استعمال کرنے پر غور
بھارت کو پاکستان سے خوف، سرحد پر جدید ٹیکنالوجی استعمال کرنے پر غور

  

نیودہلی (نیوز ڈیسک) بھارت ایک طرف تو سرحدوں کی خلاف ورزی جاری رکھے ہوئے ہے اور دوسری طرف اپنی حفاظت کیلئے دن بدن خوف کا شکار ہورہا ہے۔ اخبار ”انڈیا ٹائمز“ کے مطابق بھارتی بارڈر سکیورٹی فورسز اپنی سرحدوں کو محفوظ بنانے کیلئے لیزر ٹیکنالوجی کے استعمال پر غور کررہی ہے۔

تیس نومبر کا جلسہ، حکومت اور پی ٹی آئی کے درمیان تحریری معاہدہ منظر عام پر آ گیا

جن علاقوں میں سرحدی باڑ موجود نہیں ہے وہاں لیزر روشنیاں لگانے کا منصوبہ ہے۔ ان لیزر روشنیوں میں سے کسی بھی چیز کے گزرنے پر الارم بج اٹھیں گے۔ اسی طرح جن علاقوں میں باڑ موجود ہے وہاں زیر زمین سرنگوں کی اطلاع دینے والے سینسر لگانے کا منصوبہ بھی زیر غور ہے۔ اس کے علاوہ تھرمل سینسر استعمال کرنے کا منصوبہ بھی زیر غور ہے۔

کیا آپ کو معلوم ہے تاج محل دراصل ایک نہیں دو ہیں

بھارت ان تمام ٹیکنالوجیز کا استعمال اپنے دوست اسرائیل سے متاثر ہوکر کرنا چاہ رہا ہے جو پہلے ہی اپنی غیر قانونی سرحدوں پر ان کا استعمال کررہا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -