انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ کی ڈومیسٹک کرکٹ میں اہم تبدیلی

انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ کی ڈومیسٹک کرکٹ میں اہم تبدیلی

لندن(آئی این پی)انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ(ای ڈبلیو سی بی) نے ڈومیسٹک کرکٹ میں اہم تبدیلی لاتے ہوئے میچ سے قبل ٹاس کو غیر ضروری قرار دینے کا اعلان کردیا۔ای ڈبلیو سی بی کے گزشتہ روز کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ڈومیسٹک کرکٹ کے اگلے سیزن کے دونوں کاؤنٹی چمپیئنز شپ کے مقابلوں میں ٹاس کو غیرضروری قرار دیتے ہوئے مہمان کپتان کو اگر لینا چاہے تو پہلے باؤلنگ کرنے کا موقع دیا جائے گا۔کرکٹ کی گزشتہ ایک سو سالہ تاریخ میں ٹاس کے ذریعے پہلے بیٹنگ یا باؤلنگ کا فیصلہ کرنے کا موقع اس وقت دیا جائے گاجب مہمان کپتان پہلے باؤلنگ کرنے سے انکار کرے۔یہ فیصلہ ای سی بی کی بورڑ کے اجلاس میں ایک سال کے لیے تجزیاتی طورپر کیا گیا، کرکٹ کمیٹی کے سربراہ پیٹررائٹ کا کہنا تھا کہ یہ قرارداد انگلش اسپنرز کی بہتری کے حوالے سے کی گئی تشویش کے نتیجے میں لائی گئی تھی۔اس فیصلے کا ایک مقصد میزبان ٹیم کو ٹاس جیت کر پچ کا فائدہ اٹھاتے ہوتے ہوئے بیٹنگ میں مشکلات کھڑی کرنے سے روکنے کے لیے مہمان کپتان کو موقع دینا ہے۔انہوں نے کہا کہ کئی سالوں سے چمپیئنز شپ میں پچ کے حوالے سے تشویش کا اظہار کیا جاتا رہا ہے لیکن یہ حقیقت ہے کہ اسپن باؤلنگ نے ملک میں کچھ چیزوں پر توجہ دلائی ہے۔انھوں نے کہا کہ کمیٹی کے اجلاس میں چمپیئنز شپ 2015 میں پیش کردہ اعداد شمار میں اسپن باؤلنگ کا حصہ کل باؤلنگ کا 21.5 فی صد دکھایا گیا۔

جس کے باعث وہ اس فیصلے پر پہنچے کہ اسپن باؤلنگ کی حوصلہ افزائی کے لیے بہترین پچ بنائی جائیں۔پیٹر رائٹ کا مزید کہنا تھا کہ"ہر ملک میچوں میں کامیابی حاصل کرنا چاہتا ہے جس کا عام مطلب یہی ہے کہ 20 وکٹیں حاصل کی جائیں جس کی وجہ سے ہم نے بہت ساری پچز دیکھیں جو شروع میں گرین ہوتی ہیں اور پھر نمی آجاتی ہے اور جیسے جیسے کھیل آگے بڑھتا ہے بہتر ہوتی جاتی ہیں بجائے اس کے کہ اسپنروں کو بھی مدد ملے۔دوسری انگلینڈ کی ون ڈے ٹیم کے کپتان آئن مورگن سمیت کئی سابق کھلاڑیوں نے بھی اس فیصلے کی حمایت کی ہے۔انگلش بورڑ کے اس فیصلے پر عمل درآمد 2016 کی ڈومیسٹک چمپینز شپ میں کیا جائے گا

مزید : کھیل اور کھلاڑی