قائداعظم ریزیڈنسی کی مخدوش صورتحال ، حلیم عادل کا وزیراعلیٰ کو خط

قائداعظم ریزیڈنسی کی مخدوش صورتحال ، حلیم عادل کا وزیراعلیٰ کو خط

کراچی (اسٹاف رپورٹر)قائداعظم ریزیڈنسی کی انتظامیہ کی ناہلی ،جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر،جھنڈے بوسیدہونے کی صورتحال پر مسلم لیگ سندھ کے صدر حلیم عادل شیخ نے وزیراعلیٰ سندھ کو خط لکھ دیا،وزیراعلیٰ سندھ سمیت یہ خط منسٹر کلچر،سیکرٹری کلچر،کمشنر کراچی سمیت متعلقہ اداروں کو بھی ارسال کیا گیا ہے ،خط میں لکھا گیا ہے کہ فلیگ ہاؤس کی حالت زار نہایت مخدوش ہے،خط میں مطالبہ کیا گیا ہے فلیگ ہاؤس کی حالت زار درست کرنے کے لیے اقدامات اٹھائے جائیں ، یہاں پر آئے روز غیر ملکی سیاحوں ،وزیروں سفیروں اورمختلف اسکولوں اور کالجز کے طلباء وطالبات کاآنا جانا لگا رہتا ہے ،گزشتہ دنوں بھی سابق بھارتی وزیر اعظم لال بہادر شاستری کے صاحبزادے سابق بھارتی وزیرخزانہ انیل کمار شاستر ی بھارت سے سینیٹرمشاہدحسین سید کی دعوت پر پاکستان میں ایک کانفرنس میں تشریف لائے ہوئے تھے ،بعد ازاں انہوں نے کراچی میں تفریحی کی غرض سے آنے کی خواہش کااظہار کیا،اوراس سلسلے میں مسلم لیگ سندھ کے صدرحلیم عادل شیخ نے مہمان نواز ی کے فرائض انجام دیئے ،انیل کمار شاستری جب قائداعظم ریزیڈنسی گئے تو انہوں نے وہاں پر لگے بوسیدہ جھنڈوں اور جابجا گندگی کے ڈھیر دیکھ کی نہایت تشویش کا اظہار کیا،صفائی ستھرائی اور جھنڈے تبدیل کرنے کے بارے میں انیل کمار شاستری نے انتظامیہ سے پوچھا تو ان کو یہ جواب دیا گیا کہ ہمارے پاس تو جھاڑوخریدنے کے لیے پیسے نہیں ہیں آپ 600روپے کا جھنڈا خریدنے کی بات کرتے ہیں ،اس جواب پر کانگریسی لیڈر نے اپنی جیب سے انتظامیہ کو ایک ہزار روپے کا نوٹ نکال کر دیا اوراسی اثناء انہوں نے اپنے جو تاثرات قلمبند کیئے اس میں بھی اس بات کا تزکرہ کیا،خط میں لکھا گیا کہ یہ عمل انتظامیہ کی جانب سے باعث شرم ہیں ،انتظامیہ کے پاس فنڈ نہیں تھے یا انہیں کوئی شکایت تھی تو وہ محکمہ کو بتاتے ،ہندوستان سے آئے ہوئے مہمان کے آگے دھائیاں دینے کی کیا ضرورت تھی ،خط میں لکھا گیا کہ انیل کمار شاستری حلیم عادل شیخ کی دعوت پر ان سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی ،جہاں سینئر صحافی اور دانشور بھی موجود تھے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول