ایچ آئی وی،ایڈز مریضوں کے علاج کیلئے 21مراکز قائم کیے،ڈاکٹرنصیر

ایچ آئی وی،ایڈز مریضوں کے علاج کیلئے 21مراکز قائم کیے،ڈاکٹرنصیر

اسلام آباد(نمائندہ خصوصی)وزار ت نیشنل ہیلتھ سروسز، ریگولیشن اینڈ کوارڈینیشن نے اپنے نیشنل ایڈز کنٹرول پروگرام کے ذریعے ایچ آئی وی ؍ایڈز کے مریضوں کے علاج کے لئے 21مراکزاور کمیونٹی کی سطح پر سپورٹ کے 20مراکز قائم کئے ہیں۔ یہ بات نیشنل ایڈز کنٹرول پروگرام کے (نیشنل مینجر) ڈاکٹر نصیر خان اچکزئی نے وزارت قومی صحت اور اقوام متحدہ کے اطلاعاتی ادارہ( یو این آئی سی) کے زیر اہتمام میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتائی ۔ اقوام متحدہ کے ایڈز بارے کنٹری ڈائریکٹر ڈاکٹر محمد وسیخو نے کہا کہ پاکستان میں گزشتہ 2سالوں سے ایچ آئی وی ؍ایڈز کے علاج کے حوالہ سے صورت حال بہتر ہو رہی ہے اور یو این ایڈز پاکستان کے نیشنل ایڈز کنٹرول پروگرام کو تمام قسم کی ٹیکنیکل معاونت دینے کے لئے بھر پور کوششیں کر رہا ہے ۔ اس ضمن میں وزارت قومی صحت کے تحت چلایا جانے والا پروگرام بڑا کامیاب رہا ہے جس کی کوششوں سے اب ایڈز کے خلاف اقدامات اور بیماری پر قابو پانے اور علاج کے حوالہ سے بڑی بہتری آئی ہے ۔ میڈیا کے نمائندوں کو اقوام متحدہ کے اطلاعاتی مرکز میں دی گئی بریفنگ کے دوران اقوام متحدہ کے بچوں کے لئے ایمرجنسی فنڈ یونیسف کے ڈاکٹر ناصر سرفراز نے بتایا کہ نیشنل ایڈز پروگرفام نے یونیسف کے تعاون سے ماؤں سے بچوں میں ایڈز کی منتقلی کی بڑی کامیابی سے روک تھام کی ہے ۔ ایڈز کنٹرول کرنے کے قومی پروگرام کے ڈائریکٹر ڈٰاکٹر بصیر اچکزئی نے شرکاء کو بریفنگ دیتے ہوئے ایڈز ؍ایچ آئی وی کے مریضوں کی تعداد اور مختلف اعدادو شمار بتائے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ایچ آئی وی کے مریضوں کی تعداد 94ہزار کے لگ بھگ ہو سکتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ایچ آئی وی؍ ایڈز کے مریضوں کی اب تک رجسٹر کی جانے والی تعداد 14ہزار ہے ۔ انہوں نے میڈیا سے بیماری کا ٹیسٹ کروانے اور علاج کروانے کے سلسلہ میں عوام الناس میں شعور و آگاہی پیدا کرنے کی درخواست کی ۔ بریفنگ سے یو این آئی سی اسلام آباد کے سربراہ ویٹوری نے بھی خطاب کیا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر