الطاف حسین کو باہر سے خطرہ نہیں ،ایم کیو ایم کے اندر مائنس ون فارمولے پر کام ہورہا ہے: عمران خان

الطاف حسین کو باہر سے خطرہ نہیں ،ایم کیو ایم کے اندر مائنس ون فارمولے پر کام ...
الطاف حسین کو باہر سے خطرہ نہیں ،ایم کیو ایم کے اندر مائنس ون فارمولے پر کام ہورہا ہے: عمران خان

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم کا پہلا جلسہ دیکھا جس میں الطاف حسین کی کوئی تصویر نہیں تھی اور نہ ہی تقریر سننے کو ملی،الطاف بھائی کو پیغام دینا چاہوں گا کہ ان کو باہر سے خطرہ نہیں ہے بلکہ پارٹی کے اندر ہی مائنس ون فارمولہ پر کام ہورہا ہے۔

کراچی میں انتخابی ریلی سے مختلف مقامات پرخطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن سے پوچھتا ہوں دنیا میں کوئی جمہوری ملک بتادو جہاں ایک پارٹی چیئرمین جس کے پاس کوئی انتظامی عہدہ نہیں ہے کو انتخابی مہم میں جانے سے روکا جاتا ہے ایسا دنیا کی کسی جمہوریت میں نہیں ہوتا بلکہ آمریت میں ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے گلگت بلتستان میں 40 ارب کا پیکج دیا لیکن الیکشن کمیشن نے نہیں روکا ،پنجاب کے بلدیاتی انتخابات سے پہلے کسان پیکج دیا گیا،این اے 154 میں ڈھائی ارب روپے کا پیکج دیا گیا،این اے 122 کے الیکشن میں ریلوے کے وزیر نے ریلوے کالونی میں مہم چلائی،الیکشن سے پہلے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے کارڈ بانٹے جاتے ہیں لیکن الیکشن کمیشن نے کبھی بھی حکمران جماعت کے خلاف کارروائی نہیں کی۔

انہوں نے کہا کہ جو نظام منصفانہ نہ ہو اس کو عمران خان اور عوام نہیں مانتے میرے اوپر جتنی ایف آئی آرز کٹیں گی وہ الیکشن کمیشن پر دھبہ ہوگا،ایک نظام جب پرامن انقلاب کے دروازے بند کرتا ہے تو خونیں انقلاب کی راہیں ہموار ہوتی ہیں پاکستانی قوم اپنے حق کیلئے کھڑی ہوگئی ہے دھرنے میں عوام کو صرف ایک پیغام گیا کہ اپنے حقوق کیلئے کھڑا ہونا پڑے گ۔

نئے ٹیکسوں کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ پانچ سو خاندان ملک پر قابض ہیں اسحاق ڈار نئے نئے ٹیکس لگارہے ہیں جبکہ دبئی میں 430 ارب روپے کی پراپرٹی خریدی گئی۔انہوں نے کہا کہ اسحاق ڈار کو کہنا چاہوں گا کہ ملک سے پیسہ باہر جارہا ہے ، بجائے پیسہ ملک میں واپس لانے کے ، سوئس بنکوں سے زرداری کا پیسہ واپس لانے کے عوام پر نئے نئے ٹیکس لگائے جارہے ہیں۔

کراچی کے عوام سب سے زیادہ باشعور ہیں ، تمام تحریکیں کراچی سے شروع ہوئیں کراچی کے لوگوں کو امن چاہیے، کراچی کو نفرتیں نہیں چاہئیں،کراچی میں امن کو بہتر وہ لوگ کرسکتے ہیں جو پولیس کو غیر سیاسی کریں گے آج کراچی کی پولیس ٹھیک کردی جائے تو رینجرز کی ضرورت ختم ہوجائے گی۔ پولیس کو صاف کردیا جائے توپولیس کراچی سے دہشتگردی ختم کردے گی،سپریم کورٹ اور سینیٹ کی سٹینڈنگ کمیٹی نے خیبرپختونخوا کی پولیس کی تعریف کی۔سب سے امیر شہر ہونے کے باوجود کراچی میں پانی نہیں ہے۔ پاکستان تحریک انصاف انشاءاللہ نیا کراچی بنائے گی۔

مزید : کراچی /اہم خبریں