سعودی عرب میں ہم جنس پرست گھوڑے کو موت کی سزا، دنیا میں ہنگامہ برپا کرنے والی خبر کی اصل کہانی سامنے آگئی

سعودی عرب میں ہم جنس پرست گھوڑے کو موت کی سزا، دنیا میں ہنگامہ برپا کرنے والی ...
سعودی عرب میں ہم جنس پرست گھوڑے کو موت کی سزا، دنیا میں ہنگامہ برپا کرنے والی خبر کی اصل کہانی سامنے آگئی

  


ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا کے مختلف ممالک میں سنگین جرائم کی سزا موت ہے۔ سعودی عرب میں قتل اور منشیات سمگلنگ جیسے جرائم پر مجرموں کے سرقلم کر دیئے جاتے ہیں لیکن گزشتہ دنوں مبینہ طور پر مملکت میں ریس کے ایک قیمتی گھوڑے کو موت کی سزا سنا دی گئی ہے۔اس گھوڑے کی قیمت 1کروڑ 20لاکھ ڈالر(تقریباً1ارب 20کروڑ روپے) ہے اور مغربی میڈیا دعوٰی کر رہا ہے کہ اسے ”ہم جنس پرستی“ کے الزام میں موت کی سزا سنائی گئی ہے۔ امریکی اور فرانسیسی نیوز ویب سائٹوں کا کہنا ہے کہ مذہبی پولیس نے اس سزا کے فیصلے پر توثیقی دستخظ کیے اور حکام نے یہ دستخط ٹی وی کیمروں کے سامنے کیے۔ سعودی عرب کی نیوز ویب سائٹ سبق(Sabq)کے مطابق سب سے پہلے یہ خبر امریکی اور فرانسیسی نیوز ویب سائٹس پر شائع کی گئی۔ ان رپورٹس کے مطابق اس قیمتی گھوڑے کو اصطبل میں 2مرتبہ دیگر گھوڑوں کے ساتھ جنسی فعل کرتے ہوئے پایا گیا، جس پر اصطبل کے ملازمین نے مقامی حکام کو اطلاع دی۔

مزیدجانئے: 3اساتذہ کا ایک سال تک طالبہ سے ایسا شرمناک سلوک کہ انسانیت شرماجائے

اطلاع ملنے پر اس گھوڑے کو فوری طور پر دیگر گھوڑوں سے علیحدہ کر دیا گیا اور اس کی سزا تجویز کرنے کا مرحلہ شروع ہو گیا۔ رپورٹس کے مطابق گھوڑے کو زہریلا انجکشن دے کر یا کسی اور طریقے سے موت کے گھاٹ اتار دیا جائے گا۔امریکی اور فرانسیسی ویب سائٹس کی رپورٹس میں دعوٰی کیا گیا ہے کہ حکام گھوڑے کو موت کی سزا دے کر یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ سلطنت میں کسی بھی شکل میں ہم جنس پرستی قبول نہیں کی جائے گی۔

سوشل میڈیا پر سعودی صارفین اس رپورٹ کو جھوٹ کا پلندہ قرار دتے ہوئے مغربی میڈیا کو شدید تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ صارفین کا کہنا ہے کہ مغربی میڈیا اسلام، سعودی عرب اور مسلمانوں کے خلاف جھوٹا پراپیگنڈہ کرکے انہیں دنیا میں بدنام کرتا رہتا ہے۔ یہ رپورٹ بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔ صارفین کا کہنا تھا کہ مغربی میڈیا کا جھوٹا پراپیگنڈہ اب نہیں چلے گا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس