سی پی او کے احکامات نظر انداز‘ وارڈ نز چالان کرنے سے باز نہ آئے

سی پی او کے احکامات نظر انداز‘ وارڈ نز چالان کرنے سے باز نہ آئے

ملتان(کرائم رپورٹر ) سٹی پولیس آفیسر احسن یونس کے احکامات نظر انداز ٹریفک وارڈنز ٹارگٹ چالان کرنے سے باز نہ آئے ۔شہریوں اور ٹریفک وارڈنز کے درمیان جھگڑے اور ،شہریوں کے خلاف وارڈنز کی جانب سے استغاثہ دینا معمول بن گیا۔شہریوں کی جانب سے سٹی (بقیہ نمبر6صفحہ12پر )

پولیس آفیسر سے معاملے کا نوٹس لینے کا مطالبہ ۔واضح رہے کہ کچھ روز قبل سی پی او ملتان احسن یونس نے رواں سال ٹریفک وارڈنز کی جانب سے ساڑھے تین لاکھ موٹر سائیکلوں کے چالان کرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے چیف ٹریفک آفیسر کو تنبیہ کی کہ چالان کا سلسلہ روکا جائے۔بعدازاں سی پی او نے ٹریفک وارڈنزکا دربار منعقد کیا جہاں خطاب کے دوران سی پی او نے کہا کہ موٹر سائیکل مڈل کلاس طبقہ کی سواری ہے،ٹریفک وارڈنز موٹر سائیکل سوار افراد کا ٹارگٹ چالان نہ کریں سنگین قانون شکنی کی صورت میں ہی چالان کریں ،اور شہریوں سے حسن و سلوک سے پیش آئیں۔اس کے برعکس وارڈنز نے احکامات پر عملدرامد کرنے کی بجائے پرانی روش اپنائی ہوئی ہے اور چالان کا سلسلہ بند نہ کیا ہے دوسری جانب شہریوں سے جھڑپ کا بھی معاملہ بڑھتا جارہا ہے ،ابھی پچھلے ہی دنوں سیٹ بیلٹ نہ باندھنے پر ٹریفک وارڈن نے شہری کو کھری کھری سنا دیں،نوبت ہاتھا پائی تک جا پہنچی۔ وارڈن کی درخواست پر سیتل ماڑی پولیس نے شہری عبدالحمید کے خلاف کار سرکار میں مزاحمت اور قتل کی دھمکیاں دینے کا مقدمہ درج کیا۔

نظر انداز

مزید : ملتان صفحہ آخر