پنجاب سے مقابلے کیلئے پارٹی خواہش پر میگا پراجیکٹس پر اربوں روپے ضائع کررہا ہوں :پرویز خٹک

پنجاب سے مقابلے کیلئے پارٹی خواہش پر میگا پراجیکٹس پر اربوں روپے ضائع کررہا ...

لاہور (آئی این پی، این این آئی) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواپرویز خٹک نے کہا ہے کہ پنجاب کامقابلہ کر نے کیلئے پارٹی کی خواہش پر خیبر پختونخواہ میں میگا پر اجیکٹس پر اربوں روپے ضائع کر رہا ہوں ‘ میری نظر میں ہمیں میگا پر اجیکٹس پر نہیں صحت ‘تعلیم اور بنیادی سہولتوں کی فراہمی پر فوکس کر نا چاہیے ‘ چوہدری نثار کا رازدان ہوں آئندہ میرے خلاف بولے تو ایسا بم پھاڑوں گا یادر کھیں گے‘ عمران خان نے جتنے بڑے ٹارگٹ دے رکھے ہیں اگر دن 100گھنٹے کا ہو جا ئے تو پھر ہم شاید ان کوپو را کر سکیں ‘وزیر اعظم کے بیٹے نے اپنے باپ کو جھوٹا ثابت کر دیا ہے ، لندن کے فلیٹس تو کچھ بھی نہیں جب بات نکلے گی تو اربوں ،کھربوں تک جائے گی‘پاکستان میں امیر اور غریب کا فرق بڑھتا جا رہا ہے اگراس کو مٹانے کی کو شش نہ کی گئی تو پھر انقلا ب آئے گا پھر اس ملک کے غریب بادشاہوں کے محل گرائیں گے ، صرف چار باتوں پر عمل کرنے سے سارا نظام ٹھیک ہو سکتا ہے جس میں گڈ گورننس ، اداروں کو غیر سیا سی بنانا ،انصاف کی فراہمی کو یقینی بنانا اور میرٹ پر فیصلے کرنا شامل ہے‘ ،ہم نے خیبر پختوانخواہ کو ٹریک پر ڈال دیا ہے ، ابھی گاڑی تھوڑی چلی ہے اگر پو ری چل گئی تو (ن) لیگ زمین پر اور ہم آسمان پر ہوں گے۔ وہ مقامی ہوٹل میں انصاف پروفیشنل فورم کے زیر اہتمام منعقدہ تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواپر ویز خٹک نے کہا کہ پاکستان کے ہر بچے کو معلوم ہے کہ وزیر اعظم نے چوری کی ہے اور اوپر سے جھوٹ بول رہے ہیں ، پانامہ لیکس کے معاملے میں وزیر اعظم کے بیٹے نے اپنے باپ کو جھوٹا ثابت کر دیا ہے کیونکہ وزیر اعظم کی پارلیمنٹ میں کی گئی تقریر میں قطری شہزادے کا کوئی ذکر نہیں تھا اور بیٹا قطری شہزادے کو لے آیا ہے ، اب دونوں میں سے سچا کون ہے ، یہ میں نہیں جانتا ۔لندن کے فلیٹس تو کچھ بھی نہیں کیونکہ جب بات نکلے گی تو اربوں ،کھربوں تک جائے گی ۔ جب میں خیبر پختوانخواہ سے قافلہ لے کر آرہا تھاتو میں اس وقت بہت مزے میں تھا کیونکہ میں تو صرف قیادت کر رہا تھا ، اب ہم بہت تربیت حاصل کر چکے ہیں ، اب کسی کا باپ بھی ہمارا راستہ نہیں روک سکتا ،یہ تو ان کی قسمت اچھی تھی کہ جو عدالت کا فیصلہ آگیا ورنہ میں نے تو پو رے ایک مہینے تک احتجاج کا پر وگرام بنایا تھا لیکن جب عمران خان نے اچانک دھرنا ختم کرنے کا اعلان کیا تو مجھے بہت افسوس ہوا ورنہ یہ تو بہت تما شہ لگنا تھا البتہ ملک کو نقصان بھی ہو نا تھا ، ہما رے لیڈر کا محاصرہ کیا جا چکا تھا ، یہ ہمیں روکنے والے کون ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان نے صرف اسلام آباد بند کرنے کی بات کی تو وہ غیر آئینی ہے اور انہوں نے پو را ملک بند کردیا ، لا ٹھیاں ماریں ، آنسو گیس چلائی ، گرفتاریاں کیں کیا یہ سب آئینی ہے ؟ہما ری حکومت تبدیلی کے ایجنڈے پر آئی تھی کہ ہم نظام کو ٹھیک کریں گے ، اپنے آپ کو بے اختیا راور عوام کو بااختیار کریں گے ، پاکستان میں امیر اور غریب کا فرق بڑھتا جا رہا ہے اگراس کو مٹانے کی کو شش نہ کی گئی تو پھر انقلا ب آئے گا پھر اس ملک کے غریب بادشاہوں کے محل گرائیں گے ، صرف چار باتوں پر عمل کرنے سے سارا نظام ٹھیک ہو سکتا ہے جس میں گڈ گورننس ، اداروں کو غیر سیا سی بنانا ،انصاف کی فراہمی کو یقینی بنانا اور میرٹ پر فیصلے کرنا شامل ہے۔ جب تک ادارے سیا سی تسلط سے آزاد نہیں ہوں گے تب تک عوام کی خدمت نہیں کر سکتے ، یہ ادارے مغل بادشاہوں کے غلام بن چکے ہیں ، میں نے خیبر پختوانخواہ میں پو لیس کو غیر سیاسی کیا تو پھر یہ ٹھیک ہوئی ، وزیر اعلیٰ پنجاب سے بھی کہتا ہوں کہ آپ بھی پو لیس کے نظام میں تبدیلی لائیں ۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختوانخواکی بیوروکریسی سے میرا جھگڑا یہی ہے کہ وہ کہتی ہے کہ یہ کام اس طرح نہیں ہو سکتا ،بیوروکریسی کون ہو تی ہے جو میرے کا موں میں رکاوٹ ڈالے ، اس ملک کو برباد کرنے میں آدھا ہاتھ سیاستدانوں کا اورہزاروں ہا تھ بیوروکریسی کے ہیں ۔ 40ارب روپے سے سوات موٹر وے بنا رہا ہوں ، 2ماہ بعد پشاور میں بھی میٹرو بس کا افتتاح ہو جائے گا،ہر شہر میں متعدد فلائی اوور بنا رہے ہیں ،ہم نے خیبر پختوانخواہ کو ٹریک پر ڈال دیا ہے ، ابھی گاڑی تھوڑی چلی ہے اگر پو ری چل گئی تو (ن) لیگ زمین پر اور ہم آسمان پر ہوں گے ۔جتنے فنڈز میگا پراجیکٹس پر خرچ ہو رہے ہیں ان میں سے صرف چند ارب لگا کر کئی سرکاری ہسپتالوں اور تعلیمی اداروں کی حالت کو سدھارا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے چوہدری نثار کیلئے ایک ’’بم ‘‘رکھا ہوا ہے اگر انہوں نے آئندہ کوئی بات کی تو اسے چلا دوں گا، جب تک وہ گزار ا کرے گا تب تک میں بھی اس کے ساتھ گزارا کروں گا ، کیونکہ ہم دونوں بچپن کے دوست ہیں اور ایک دوسرے کی ہر ایک بات جانتے ہیں اس موقعہ پر دیگر نے بھی خطاب کیا ہے ۔وزیر اعلیٰ خیبر پختوانخواہ پرویز خٹک نے کہا ہے کہ سی پیک میں روس کو گوادر تک رسائی دینا اچھی بات ہے ،خیبر پختونخوا ہ کی حکومت نے سی پیک منصوبے کی کبھی بھی مخالفت نہیں کی ،نواز شریف نے ویسٹرن روٹ کے حوالے سے جو وعدہ کیا تھا وہ پورا کریں ،حکمران عوام کو دھوکہ دیتے اور جھوٹ بولتے ہیں نواز شریف سی پیک کے حوالے سے تمام جماعتوں کو مطمئن کریں ورنہ اس کے خطرناک نتائج نکلیں گے ،شہباز شریف کے کہنے پر پنجاب پولیس نے پی ٹی آئی کے کارکنوں پر شیلنگ کی میں انکے خلاف ہائی کورٹ میں جا رہا ہوں ۔شہباز شریف کے کہنے پر پنجاب پولیس نے پی ٹی آئی کے کارکنوں پر شیلنگ کی ،انکے خلاف ہائیکورٹ جا رہا ہوں۔

مزید : علاقائی