ایم این اے کے کمرے سے برآمدہ خاتون کی لاش ورثا کے حوالے ، زہر دیکر قتل کرنے کا انکشاف

ایم این اے کے کمرے سے برآمدہ خاتون کی لاش ورثا کے حوالے ، زہر دیکر قتل کرنے کا ...
 ایم این اے کے کمرے سے برآمدہ خاتون کی لاش ورثا کے حوالے ، زہر دیکر قتل کرنے کا انکشاف

  

 لاہور(وقائع نگار) چمبہ ہاؤس میں ساہیوال سے منتخب ایم این اے چودھری اشرف کے کمرے سے برآمد شدہ 40 سالہ خاتون کی لاش کوپوسٹ مارٹم کی کارروائی مکمل کر کے ورثا کے حوالے کر دیاگیا۔ کمرہ ساہیوال سے لیگی ایم این اے چودھری اشرف کے نام پر بک کرایا گیا تھا۔پولیس کے مطابق ریس کورس جی او آر میں واقع چمبہ ہاؤس سے چالیس سالہ سمیعہ چودھری کی لاش برآمد ہوئی جو کہ ساہیوال کی رہائشی تھی۔ متوفیہ بائیس نومبر کو چمبہ ہاؤس کے کمرہ نمبر 26 میں ایم این اے چودھری اشرف کے ریفرنس سے رہنے آئی تھی۔گزشتہ روز کمرے میں سمیعہ چودھری کی لاش انتظامیہ کوملی۔ جنہوں نے پولیس کو اطلاع دی جنہوں نے موقع پر پہنچ کر شواہد اکٹھے کرنے کے بعد لاش کو پوسٹمارٹم کے لیے مردہ خانے منتقل کر دیا جسے گزشتہ روز پوسٹ مارٹم کی کارروائی مکمل کر کے ورثا کے حوالے کر دیا گیا ۔پولیس کے مطابق خاتون کے جسم پر تشدد کا کوئی نشان نہیں لیکن اس کی ناک سے خون اور منہ سے جھاگ نکل رہی تھی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ پوسٹمارٹم رپورٹ اور تفتیش کے بعد اصل حقائق سامنے آئیں گے۔ ابتدائی تفتیش کے مطابق خاتون کو زہر دے کر قتل کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔ذرائع کے مطابق جاں بحق ہونے والی خاتون( ن) لیگ کی ورکرتھی ۔پولیس نے قتل کا مقدمہ نامعلوم افراد کیخلاف تھانہ ریس کورس میں درج کر لیا ہے۔ایف آئی آر مقتولہ کے شوہر میاں آصف کی مدعیت میں درج کی گئی جس میں کہا گیا ہے کہ نامعلوم افراد نے سمیعہ چوہدری کو قتل کیا ہے۔پولیس کے مطابق ابتدائی تفتیش میں پتہ چلا ہے کہ مقتولہ شور کوٹ سے لاہور پہنچی تھی اور چمبہ ہاؤس میں قیام کیا جہاں اس کی لاش ملی۔ چمبہ ہاؤس میں خفیہ ادارے کا اہلکار بھی تفتیش کے لیے پہنچا اور مقتولہ کی کار کا معائنہ کیا۔تفتیشی نے ملازمین سے پوچھ گچھ کی لیکن ان کا کہنا تھا کہ انہیں ایکسئین نصیر وڑائچ نے بات کرنے سے منع کر رکھا ہے۔

مزید : علاقائی