مدرسہ دارالفرقان حیات آباد پر پولیس چھاپے کی مذمت ،ایکشن کمیٹی تشکیل

مدرسہ دارالفرقان حیات آباد پر پولیس چھاپے کی مذمت ،ایکشن کمیٹی تشکیل

پشاور(کرائمز رپورٹر) گذشتہ شب دارالفرقان حیات آبادپر پولیس کے بلاجواز چھاپے، طلبہ کرام کوہراساں کرنے اور مسجد ومدرسہ کی بے حرمتی کے واقعے پر جمعیت علماء اسلام، وفاق المدارس العربیہ پاکستان،مجلس علماء حیات آباد کے رہنماؤں اور پشاور بھر کے مدارس مہتممین کا ایک بھر پور اجلاس دارالفرقان حیات آباد میں وفاق المدارس کے مرکزی نائب صدر مولاناانوارالحق نائب مہتمم دارالعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک کی صدرات میں منعقد ہوا ۔ جسمیں مفتی غلام الرحمن،مولانا رفیع اللہ قاسمی ،مولانا خیر البشر اور صوبائی ناظم وفاق المدارس مولانا حسین احمد کے علاوہ کثیر تعداد میں علماء مہتممین نے شریک ہوئے ۔

اجلاس میں پولیس چھاپے پر سخت غم وغصہ کااظہار کرتے ہوئے اس کی شدید مذمت کی گئی۔اور متعقلہ ڈی ایس پی اور ایس ایچ او کے خلاف کارروائی کا پرزور مطالبہ کیا گیا ۔مدارس کے ساتھ مزید امتیازی اورتوہین امیز اور مجرمانہ سلوک برداشت نہیں کیا جائے گا۔شرکاء اجلاس نے رجسٹریشن میں رکاوٹ ،ڈیٹا فراہمی کے آئے روز مطالبات اور مدارس ومساجد اور طلبہ وعلمائے دین کی بے حرمتی کی شدید مذمت کرتے ہوئے مدارس ومراکز دینیہ کی حفاظت کے لیے ہر طرح کی قربانی دینے کا عزم ظاہر کیا ۔اس سلسلے میں مولانا انوارالحق کی سربراہی میں ایکشن کمیٹی تشکیل دی گئی ۔ جن کے ساتھ مولانا رفیع اللہ قاسمی ،مولانا خیر البشر ، مولانامفتی سلمان فدا،مولانا عبدالبصیر شاہ ،مولانا عبداللطیف ،مولانا جواد بنوری اور صوبائی ناظم وفاق المدارس مولانا حسین احمد ہوں گے۔ ایکشن کمیٹی بہت جلد ائندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کرے گی۔کمیٹی کا اجلاس کل دارالعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک میں ہوگا۔

مزید : علاقائی