تحریک طالبان پاکستان نے سابق پولیس اہلکارکو کراچی کیلئے امیرمقررکر دیا

تحریک طالبان پاکستان نے سابق پولیس اہلکارکو کراچی کیلئے امیرمقررکر دیا
تحریک طالبان پاکستان نے سابق پولیس اہلکارکو کراچی کیلئے امیرمقررکر دیا

  

کراچی (ویب ڈیسک) تحریک طالبان پاکستان نے کراچی کے سابق پولیس اہلکار کوٹی ٹی پی کراچی کا امیر مقرر کر دیا۔روزنامہ جنگ کے مطابق ٹی ٹی پی کی جانب سے جاری کی گئی ایک ویڈیومیں داﺅد محسود کو کراچی کا نیا امیر مقرر کیا گیا ہے۔حاجی داﺅد محسود کراچی پولیس کا سابق ہیڈ کانسٹیبل اورضلع ملیر میں واقع قائدآباد تھانے میں تعینات تھا۔ داﺅد محسود ٹی ٹی پی کے امیر حکیم اللہ محسود کے قریبی ساتھیوں میں سے تھا اور اس نے اس سے قبل بھی کراچی میں ٹی ٹی پی کیلئے بہت سے کام کیے ہیں۔

وزیر اعظم نے جنرل اشفاق ندیم کو آرمی چیف نہ بنا کر راحیل شریف کی آخری خواہش پوری نہیں کی: سمیع ابراہیم

تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے جاری کردہ ویڈیو پیغام میں ٹی ٹی پی کے امیر ملا فضل اللہ کی جانب سے یہ پیغام دیا گیا ہے کہ ٹی ٹی پی کی رہبری شوریٰ( مرکزی شوریٰ) نے حاجی داﺅد محسود کو ٹی ٹی پی حلقہ کراچی کا امیر مقرر کیا ہے اور ٹی ٹی پی کے تمام گروپس داﺅد محسود کے فیصلوں کی پاسداری کریں۔ کاﺅنٹر ٹیرر ازم ڈیپارٹمنٹ کے سینئر افسر راجہ عمر خطاب کے مطابق ٹی ٹی پی کا ضلع ویسٹ میں مضبوط نیٹ ور ک تھا لیکن کراچی آپریشن کے بعد پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی پے درپے کارروائیوں کے بعد ضلع ویسٹ میں انکا نیٹ ورک تقریباً ختم ہو گیا ہے تاہم ضلع ایسٹ میں کچھ علاقے ہیں جہاں انکا نیٹ ورک کسی بھی طرح سے موجود ہے اور وہی علاقے داﺅد محسود کا ہدف ہوں گے۔

انہوں نے بتایا کہ داﺅد محسود کو امیر مقرر کرنے کی ویڈیو جاری کرنے کا اہم مقصد کراچی سے فنڈ ریزنگ کرنا ہے اور محسود قبیلے کے لوگوں کو،چاہے وہ دہشت گردی میں ملوث ہوں یا نہ ہوں یہ پیغام پہنچانا ہے کہ ٹھیلوں،پتھاریداروں اور تھلوں کے پیسے چندے کے نام پر انھیں دیئے جائیں۔انہوں نے بتایا کہ اس سے قبل بھی داﺅد محسود ٹی ٹی پی کیلئے کراچی سے فنڈنگ کرتا رہا ہے۔ داﺅد محسود قائد آباد کے علاقے کا ہی رہائشی ہے اور پولیس کا سابقہ اہلکار ہونے کی وجہ سے اسے علاقے کے بارے میں کسی بھی دوسرے ٹی ٹی پی کمانڈر سے زیادہ معلومات ہیں۔

مزید : کراچی