جج کے بارے میں خبر کی اشاعت، مقامی خبر رساں ادارے نے سپریم کورٹ سے غیر مشروط معافی مانگ لی

جج کے بارے میں خبر کی اشاعت، مقامی خبر رساں ادارے نے سپریم کورٹ سے غیر مشروط ...
جج کے بارے میں خبر کی اشاعت، مقامی خبر رساں ادارے نے سپریم کورٹ سے غیر مشروط معافی مانگ لی

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) مقامی خبر رساں ادارے نے جج کے بارے میں خبر چھاپنے پر سپریم کورٹ سے غیر مشروط معافی مانگ لی ہے اور کہا ہے کہ خبر غلط اور بے بنیاد ہے جو سسٹم کی خرابی کے باعث نشر ہوئی۔

سمعیہ چوہدری کی موت ہارٹ اٹیک سے ہو سکتی ہے ،وہ کوکین کا استعمال کرتی تھی :چودھری اشرف

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق جج کے بارے میں خبر کی اشاعت سے متعلق معاملے کی سماعت کے دوران جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دئیے کہ آج ایک جج کے بارے میں خبر نشر ہوئی ہے تو تو کل دوسرے پھر تیسرے کی باری آئے گی، یہ ادارے تباہ کرنے کی سازش ہے۔ انہوں نے کہا کہ کلمہ پڑھ کر کہتا ہوں کہ ہمارا کوئی دوست نہیں، جو بھی عدالت میں آئے گا، لوگ کر فیصلہ کریں گے کیونکہ ہم سمجھتے ہیں کہ اللہ نے ہمیں انصاف کے لئے چنا ہے۔

90 کی دہائی کی سیاست پر مجبور نہ کریں، سب جانتے ہیں کہ ہندوستانی رقاصاﺅں کیساتھ کس کے تعلقات ہیںاور شادیوں کا شوقین کون ہے: قمرالزمان کائرہ

ذرائع کے مطابق خبر رساں ادارے نے خبر کی اشاعت پر سپریم کورٹ سے غیر مشروط معافی مانگ لی ہے۔ ادارے کے وکلاءنے کہا کہ خبر غلط اور بے بنیاد ہے جو سسٹم کی خرابی کی وجہ سے نشر ہوئی۔

مزید : اسلام آباد