ٹارگٹ کلرز نے فرانزک ٹیسٹ کا توڑ نکال لیا، پستولوں کی فائرنگ پن تبدیل کرکے پولیس کو پریشانی میں ڈال دیا

ٹارگٹ کلرز نے فرانزک ٹیسٹ کا توڑ نکال لیا، پستولوں کی فائرنگ پن تبدیل کرکے ...
ٹارگٹ کلرز نے فرانزک ٹیسٹ کا توڑ نکال لیا، پستولوں کی فائرنگ پن تبدیل کرکے پولیس کو پریشانی میں ڈال دیا

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) مجرموں کو پکڑنے کیلئے اور کسی بھی واقعہ کے اصل حقائق جاننے کیلئے دنیا بھر میں فرانزک سسٹم استعمال کیا جاتا ہے جس سے تمام پردے اٹھ جاتے ہیں اور اصل قصور واران کو پکڑنے میں آسانی رہتی ہے لیکن کراچی کے ٹارگٹ کلرز کچھ زیادہ ہی تیز نکلے اور اب انہوں نے فرانزک ٹیسٹ سے بچنے کا ایسا طریقہ ڈھونڈ نکالا ہے جو نہ صرف حیران کن ہے بلکہ ناقابل یقین بھی ہے۔

نجی ٹی وی 92 نیوز کے مطابق اتوار کے روز کراچی میں تین مختلف جگہوں پر ٹارگٹ کلنگ کے واقعات پیش آئے جن میں ایک ڈی ایس پی ٹریفک شہید جبکہ ایک اور ڈی ایس پی زخمی ہوگیا۔ تینوں واقعات میں نائن ایم ایم کے پستول استعمال کیے گئے جبکہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مجموعی طور پر گولیوں کے 24 خول ملے۔ پولیس حکام نے شواہد جمع کرنے کے بعد جب ان کا فرانزک معائنہ کیا تو اس کے نتائج حیران کردینے والے تھے کیونکہ تمام واقعات ہی پرانے کسی بھی واقعے سے میچ نہیں کر رہے تھے جبکہ یہ تینوں واقعات ایک دوسرے سے بھی میچ نہیں کر رہے تھے۔

خاتون کو اپنے ہی گھر میں بوتلوں میں بند اپنے بال مل گئے، کیا گھر کا ہی کوئی شخص کالا جادو کررہا تھا؟ ایسی حقیقت سامنے آگئی کہ واقعی پیروں تلے زمین نکل گئی

ذرائع کا کہنا ہے کہ کراچی میں ٹارگٹ کلرز نے فرانزک ٹیسٹ سے بچنے کیلئے توڑ نکال لیا ہے اور کسی بھی ٹارگٹ کو نشانہ بنانے سے پہلے اپنے پستول کی فائرنگ پن تبدیل کرلیتے ہیں جس سے فرانزک رپورٹ پرانے واقعات سے میچ نہیں کرتی اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو پتا نہیں چل پاتا کہ یہ واقعات الگ الگ گروہ کر رہے ہیں یا ان میں ایک ہی گروہ ملوث ہے۔

مزید : کراچی