غیر قانونی طور پر یورپ جانے کی خواہش میں انسانی سمگلروں کے ہتھے چڑھنے والے57پاکستانی ترکی سے بازیاب

غیر قانونی طور پر یورپ جانے کی خواہش میں انسانی سمگلروں کے ہتھے چڑھنے ...
غیر قانونی طور پر یورپ جانے کی خواہش میں انسانی سمگلروں کے ہتھے چڑھنے والے57پاکستانی ترکی سے بازیاب

  

استنبول (ڈیلی پاکستان آن لائن) ترکی کی سیکورٹی فورسز نے غیر قانونی طور پر یورپ جانے کی خواہش میں انسانی سمگلروں کے ہتھے چڑھنے والے 57پاکستانیوں کو بازیاب کرا لیا ہے انسانی سمگلر بازیاب کرائے گئے پاکستانیوں سے10ہزار ڈالر (تقریبا10لاکھ 50ہزار) پاکستانی روپے طلب کر رہے تھے ، ان تارکین وطن کے پاﺅں بیڑیوں سے باندھے گئے تھے جبکہ اکثر افراد کے جسم پر تشدد کے نشانات بھی پائے گئے۔

زعیم قادری کی پیرآف سیال شریف سے ملاقات، رانا ثناءاللہ ٹی وی پر قوم سے معافی مانگ کر تجدید ایمان کرائیں: حمید الدین سیالوی

ترک اخبار ” حریت “ کی رپورٹ کے مطابق انسانی سمگلروں نے 10ہزار ڈالر کے عوض پاکستانیوں کو یورپ پہنچانے کا وعدہ کر رکھا تھا، ان میں سے پیشتر پاکستانیوں کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا ، انسانی سمگلروں نے ان پاکستانیوں کو زنجیروں سے باندھ کر استنبول کے ایک گودام میں چھپا رکھا تھا اور ان پر دباﺅ ڈال کر ان سے پیسے طلب کر رہے تھے، ترک سیکورٹی حکام کے مطابق انسانی سمگلر تارکین وطن کو یونان اور اٹلی کے راستے یورپ پہنچاتے تھے اور وہاں پہنچ کر ایک خفیہ کوڈ کے ذریعے پیغام بھیجتے تھے کہ تارکین وطن اپنے گھر والوں کو یورپ پہنچنے کا اشارہ دیتے اور انسانی سمگلر تارکین وطن کے والدین سے مطلوبہ رقم حاصل کرتے تھے۔ انسانی سمگلروں کے گروہ نے پاکستانیوں کو استنبول شہر کے یورپ میں موجود حصے کے ایک خفیہ تہ خانے میں قید کررکھا تھا اور ان پر تشدد کے ذریعے انہیں اپنے والدین کو یورپ پہنچنے کا پیغام دینے اور 10لاکھ 50ہزار کی رقم انسانی سمگلروں کے حوالے کرنے کاکہنے پر مجبور کرتے ۔آپریشن کے دوران پولیس نے پاکستان سے تعلق رکھنے والے تین انسانی سمگلروں کو گرفتار کر لیا ہے جبکہ ان کی قید سے بازیاب کرائے گئے پاکستانیوں کو علاج کے لئے ہسپتال داخل کرادیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل غیر قانونی طور پر یورپ جانے والے 20پاکستانیوں کو تربت میں گولیاں مار کر قتل کردیا تھاجس کے بعد حکومت نے کارروائی کرتے ہوئے پنجاب کے مختلف حصوں سے انسانی سمگلروں کو گرفتار کر لیا ۔

مزید :

بین الاقوامی -