آرمی چیف تقرری کے معاملے پر عدالت کو مطمئن کرناہے ، سینیٹر ولید اقبال

آرمی چیف تقرری کے معاملے پر عدالت کو مطمئن کرناہے ، سینیٹر ولید اقبال
آرمی چیف تقرری کے معاملے پر عدالت کو مطمئن کرناہے ، سینیٹر ولید اقبال

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)تحریک انصاف کے سینیٹر ولید اقبال نے کہاہے کہ آرمی چیف کی مدت میں توسیع کے حوالے سے غلطیاں کیوں ہورہی ہیں؟ میں اس بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتا لیکن ہمارا فوکس اس بات پر ہے کہ اس معاملے پر عدالت کومطمئن کرنا ہے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”آپس کی بات“میں گفتگو کرتے ہوئے ولید اقبال نے کہا کہ میں اس بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتاہے کہ آرمی چیف کی مدت میں توسیع کے حوالے سے غلطیاں کیوں ہورہی ہیں لیکن ہمارا فوکس اس بات پر ہے کہ اس معاملے پر عدالت کومطمئن کرنا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے اختیار پر کوئی ابہام نہیں ہے مسئلہ یہ ہے کہ طریقہ کار میں جوکوئی خامیاں یا کمی بیشی ہے اس کودور کرلیاجائے ۔انہوں نے کہا کہ سوال یہ اٹھا ہواہے کہ تقرر کا اختیار تو واضح ہے لیکن توسیع کا لفظ استعمال نہیں ہوا۔ اس لئے اس توسیع کیلئے تیاری کرنی ضروری ہے جس میں تقرر کے ساتھ توسیع کے اختیار کو بھی ضروری سمجھا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ عدالت میں ہونیوالے ریمارکس حتمی نہیں ہوتے ، حتمی بات فیصلے کے بعد سامنے آتی ہے ۔

مزید : قومی