حکومت کی ناقص پالیسیاں،26لاکھ بچوں کو تعلیم سے دور کرنیکا منصوبہ

حکومت کی ناقص پالیسیاں،26لاکھ بچوں کو تعلیم سے دور کرنیکا منصوبہ

  



کہروڑ پکا(سٹی رپورٹرر)بیوروکریسی اور حکومت کی ناقص پالیسیوں 26لاکھ بچوں کو تعلیم سے محروم کرنے اور 2 لاکھ ٹیچروں کو بے روز گار کرنے کا منصو بہ سامنے آیاہے۔بلڈنگ مالکان نے عدم ادائیگی کرایہ پر بلڈنگ خالی کرنے اور ٹیچروں نے بھی سکول چھوڑ نے کا سکول مالکان کو نوٹس دے دیاپنجاب ایجو کیشن فاؤنڈیشن کو قائم ہوئے17 سال ہو چکے ہیں 26لاکھ بچے اس پروگرام کے تحت تعلیم (بقیہ نمبر55صفحہ12پر)

حاصل کر رہے ہیں PEFکی ٹیمیں سکول میں سہولیات کی بھی مانیٹرنگ کرتی ہے سہولت کی عدم فراہمی کی صورت میں جرمانہ بھی کیا جاتا ہے گزشتہ کئی ماہ سے PEFکی فنڈنگ تعطل کا شکار ہے جس کی وجہ سے سکول ما لکان کو سکول چلانامشکل ہو گیا ہے اساتذہ کی تنخواہوں کی عدم ادائیگی اور کرایہ کی بلڈنگ کا کرایہ بر وقت ادا نہ ہوبے کی وجہ سے سکول مالکان پریشانیوں میں گھر چکے ہیں PEFحکام اس کی ذمہ داری حکومت اور بیوروکریسی پرڈال رہی ہے اگر ایسی صورتحال بر قرار رہی تو 26لاکھ بچوں کا مستقبل تاریک ہو جائے گا اور غریب بچے تعلیم سے محروم ہو جائیں گے اور جہاں تک اساتذہ کا تعلق ہے وہ بھی بے روز گار ہوجائیں گے کہروڑ پکا کے عوامی سماجی حلقوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس پروگرام کو جاری رکھا جائے اور فنڈنگ کے نظام کو بہتر کیا جائے۔

منصوبہ

مزید : ملتان صفحہ آخر