اراکین سندھ اسمبلی کی ڈپٹی سپیکر دوست محمد مزاری سے ملاقات، مختلف امورپرتبادلہ خیال

اراکین سندھ اسمبلی کی ڈپٹی سپیکر دوست محمد مزاری سے ملاقات، مختلف ...

  



را جن پور (نا مہ نگار) ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی سردار دوست محمد مزاری سے اراکین سندھ اسمبلی پر مشتمل وفد نے پنجاب اسمبلی میں ملاقات کی، ملاقات میں ڈی جی پارلیمانی امور پنجاب اسمبلی (بقیہ نمبر46صفحہ12پر)

عنایت اللہ لک بھی موجود تھے۔ملاقات کے دوران ڈپٹی سپیکر نے اراکین سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت کی کامیابی اور مضبوطی کے لیے سینٹ آف پاکستان، قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں نے نمائیاں کردار ادا کیا ہے اور اٹھارویں ترمیم کے بعدوفاقی پارلیمنٹ اور صوبائی اسمبلیاں پہلے سے زیادہ مضبوط، فعال اوربااختیار ہو چکے ہیں۔ تمام اسمبلیوں نے اٹھارویں ترمیم کے بعدوفاق کی طرف سے دیے گئے اختیارات کو مثبت طور پر استعمال کیاہے۔جس کے نتیجہ میں وفاقی اور صوبائی اسمبلیاں بہت سی اچھی مثالیں قائم کر رہی ہیں جن سے دوسرے ادارے بھی سیکھ رہے ہیں۔پنجاب اسمبلی کے بزنس کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پنجاب اسمبلی میں دوسری تمام اسمبلیوں کی نسبت مفادِ عامہ کے لیے ریکارڈ قانون سازی کی گئی ہے۔حکومت کی طرف سے اسمبلی کاروائی کے دوران تمام ممبران اسمبلی خواہ ان کا تعلق کسی بھی سیاسی جماعت سے ہو چاہے وہ حکومت سے ہوں یا اپوزیشن سے بلا تفریق سب کو برابری کی سطح پر ساتھ لے کر چلنے کی کوشش کی جاتی ہے اور سب کو اپنی پارٹی کی نمائندگی کا پورا موقع دیا جاتا ہے۔ممبران اسمبلی کو بھی چاہیے کہ وہ ملک کی بہتری اور عوام کی خدمت کے لیے اسمبلی فلور پر سنجیدگی سے اپنا بھرپور کردار ادا کریں۔انہوں نے مزید کہا کہ آج کی اس میٹنگ کا مقصدپنجاب اسمبلی اور سندھ اسمبلی کے اراکین کا ایک دوسرے کے تجربات سے استفادہ کر کے زیادہ موثر قانون سازی کرنا ہے۔ آج کا پلیٹ فارم دونوں صوبوں کے اراکین اسمبلی کو ایک دوسرے کے مزید قریب لانے میں اہم کردار ادا کر ے گا۔ اس سے نہ صرف دونوں صوبوں میں ہم آہنگی اور بھائی چارے کی فضا قائم کرنے میں مدد ملے گی بلکہ دونوں صوبوں کے درمیان مسائل کو سمجھنے اور ان کے مناسب حل تلاش کرنے میں بھی مدد ملے گئی۔اراکین سندھ اسمبلی نے کہا کہ لاہور آمد پر ہم سے جس محبت کا اظہار کیا گیا اسے کبھی نہیں بھلا سکتے۔وفد نے پنجاب اسمبلی کے ایوان اور پنجاب اسمبلی کی زیرتعمیر بلڈنگ کا بھی دورہ کیا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر