محکمہ ریلوے: کلا س فور، تھری ملازمین کے تبادلوں کی نئی پالیسی فائنل

محکمہ ریلوے: کلا س فور، تھری ملازمین کے تبادلوں کی نئی پالیسی فائنل

  



ملتان(واثق رؤف سے)چیف ایگزیٹو وسنیئر جنرل منیجرریلوے اعجازاحمدبڑرونے کلاس فوراورتھری کے ملازمین کے بلاجوازتبادلوں پر عدالتوں سے رجوع کرنے اوراس سلسلہ میں ریلوے کی طرف سے لاکھوں روپے قانونی جنگ پرخرچ ہونے کے معاملہ کوروکنے کے لئے ملتان سمیت تمام (بقیہ نمبر37صفحہ12پر)

ریلوے ڈویژنوں کوسزاکے طورپرملازمین کے تبادلے بغیرشوکازجاری کئے اورتحقیقات مکمل کئے بغیرکرنے پرپابندی عائد کردی ہے۔بتایاجاتاہے کہ ملتان سمیت تمام ریلوے ڈویژنوں میں ڈویژنل افسران کلاس تھری اورفورملازمین کی معمولی غلطیوں پرتبادلے کردیتے تھے جس کے بعدملازمین اپنے تبادلے کے خلاف عدالت سے رجوع کرکے حکم امتناعی حاصل کرلیتے تھے جواب میں ریلوے انتظامیہ کوبھی ان ملازمین کے خلاف عدالت میں پیش ہوناپڑتاتھاجس پرلاکھوں روپے لگ جاتے تھے اورانتظامیہ کوپریشانی کاسامناکرناپڑتاتھااس صورت حال کانوٹس لیتے ہوئے سی ای اوریلوے نے کلاس فوراورتھری کے ملازمین کے تبادلوں کی نئی پالیسی جاری کی ہے جس کے تحت ڈویژنل افسران سے کہاگیاہے کہ غلطی کے مرتکب ملازم کوشوکازجاری کیاجائے،انکوائری کاعمل مکمل کیاجائے اس کے بعدملازم کوتبادلہ کیاجائے۔ انکوائری رپورٹ تبادے کاٹھوس جوازہونے کی وجہ سے ملازمین عدالتوں سے ریلیف حاصل نہ کرسکیں گے اورملازمین کے عدالتوں میں جانے کے عمل کی حوصلہ شکنی ہوسکے گی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر