ایچ اے کنسٹر کشن کمپنی کیخلاف 6کروڑ 74ہزار روپے کی ڈگری جاری

  ایچ اے کنسٹر کشن کمپنی کیخلاف 6کروڑ 74ہزار روپے کی ڈگری جاری

  



لاہور(نامہ نگار)بینکنگ عدالت کے جج سردار طاہرصابرنے پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی کی تعمیر کرنے والی بینک ڈیفالٹر کمپنی ایچ اے کنسٹرکشن کے خلاف ڈگری جاری کردی،عدالت نے ڈیفالٹر کمپنی ایچ اے کنسٹرکشن کو 6 کروڑ 74 ہزار روپے ادا کرنے کا حکم دیاہے،عدالت نے رقم کی عدم ادائیگی کی صورت میں ڈیفالٹر کمپنی کی جائیدادیں نیلام کرنے کے لئے مزید سماعت 16 جنوری تک ملتوی کر دی ہے،بینکنگ عدالت نمبر ایک کے جج سردار طاہر صابر نے بینک الفلاح کے ریکوری کے دعوی پر سماعت کی،دعویٰ میں ایچ اے کنسٹرکشن کے پروپروائیٹر حامد اشرف اور احمد مختار کو فریق بنایا گیاتھا،بینک کے وکیل کا موقف تھا کہ ڈیفالٹر ایچ اے کنسٹرکشن نے 2007ء میں بینک سے کاروباری قرض حاصل کیا، قرض کے لئے ڈیفالٹر حامد اشرف اور احمد مختار نے لاہور میں واقع 11 کنال 7 مرلے پر مشتمل مختلف جائیدادیں رہن رکھوائیں، قرض کی رقم طے شدہ مدت میں ادا نہ کرنے پر ایچ اے کنسٹرکشن کو ڈیفالٹر قرار دیا گیا، عدالت سے استدعاہے کہ رقم کی ریکوری کے لئے ڈیفالٹرز کے خلاف 6 کروڑ 9 لاکھ 65 ہزار روپے کی ڈگری جاری کی جائے جبکہ دوسری جانب ڈیفالٹر کمپنی کے وکیل نے کہا کہ بینک کی رقم ادا کی جا چکی ہے،مذکورہ بینک نے حقائق چھپا کر ریکوری کا دعوی دائر کیاجسے خارج کیا جائے، عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد مذکورہ بالاحکم جاری کردیاہے۔

مزید : علاقائی