ایبٹ آباد،پانچ روزہ پولیو مہم میں 213905 بچوں کو قطرے پلائے گئے

ایبٹ آباد،پانچ روزہ پولیو مہم میں 213905 بچوں کو قطرے پلائے گئے

  



ایبٹ آباد(ڈسٹرکٹ رپورٹر) ضلع ایبٹ آباد میں حال ہی میں ختم ہونے والی پانچ روزہ پولیو مہم کے دوران 213905بچوں کو پولیو کے قطرے پلا کر مہم کے 93% فیصد اہدا ف حاصل کیے گئے ہیں۔ جبکہ آئندہ مہم کے لئے 219862 بچو ں کو قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔سا بقہ مہم کے دورا ن جن سات فیصد بچوں کو قطرے نہیں پلائے جا سکے وہ یا تو ضلع میں موجود نہیں تھے یا ان کے والدین سوشل میڈیا پر منفی پروپیگنڈہ کی وجہ سے پولیو کے قطرے پلانے سے انکاری تھے۔ضلع ایبٹ آباد میں آئند ہ ماہ دوپانچ روزہ پولیومہمیں دو دسمبراور 16دسمبر کو شروع کی جائیں گی۔یہ تفصیلات منگل کے روز ڈپٹی کمشنر ایبٹ آباد کی زیرصدارت منعقد کیے گئے ضلعی انسدادپولیو کمیٹی کے اجلاس میں بتائی گئیں۔ اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر شہاب محمد خان و دیگر ضلعی انتظامی افسران،ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر،ای پی آئی انچارج، ڈبلیو ایچ او کے نمائندے، ڈسٹرک خطیب،پولیس اور متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی۔اجلاس کے دوران سابقہ پولیو مہم کے نتائج اور اس دوران ضلعی انتظامیہ،محکمہ صحت اور پولیو ٹیموں کو پیش آنے والے مسائل اور مشکلات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور والدین کی جانب سے پولیو کے قطروں سے محروم رکھے گئے بچوں کو آئندہ مہم میں ہر صورت قطرے پلانے کے اقدامات کا فیصلہ کیا گیا۔ اس مقصد کے لئے ڈپٹی کمشنر نے محکمہ اطلاعات،ڈسٹرکٹ خطیب اور دیگر علماء اور محکمہ صحت سے کہا ہے کہ وہ سوشل میڈیا پر پولیو کے بارے میں منفی پروپیگنڈا کو زائل کر کے والدین کی صحیح سمت میں رہنمائی کے لیے بھرپور اقدامات کریں اور عام لوگوں میں اس بارے میں شعور پیدا کریں۔ ڈپٹی کمشنرنے واضح کیا ہے کہ پولیو مہم میں بنیادی کردار محکمہ صحت کا ہے جبکہ باقی محکموں کی خدمات محکمہ صحت کے معاونین کے طور پر دستیاب ہیں۔انہوں نے محکمہ صحت کو ہدایت کی کے وہ پولیو ٹیموں کی موثر تربیت کے اقدامات بھی کریں تاکہ آئندہ پولیو مہم کے اہداف کا سوفیصد حصول ممکن بنایا جاسکے جوضلعی انتظامیہ،محکمہ صحت اور دیگرمتعلقہ محکموں کے لیے اولین ترجیح ہونی چاہئے۔انہوں نے محکموں کو ہدایت کی کہ وہ پولیو مہم میں آنے والی رکاوٹوں اور مسائل و مشکلات سے فوری طور پر ضلعی انتظامیہ کو آگاہ کرے جبکہ مانیٹرنگ ٹیموں کو بھی مزید موثر اور فعال بنایا جائے۔انہوں نے کہا کہ پولیوجیسی خطرناک بیماری کے خاتمے کی قومی ذمہ داری نبھانے کے لئے ضلعی انتظامیہ تمام ضروری اقدامات کرے گی اور پولیو مہم کو کامیاب بنانے کے لیے کسی قسم کی کوتاہی یا غفلت برداشت نہیں کرے گی

مزید : پشاورصفحہ آخر