کشمیر کے حوالے سے ترکی اورجدہ کا دورہ انتہائی کامیاب رہا،سردار مسعود

کشمیر کے حوالے سے ترکی اورجدہ کا دورہ انتہائی کامیاب رہا،سردار مسعود

  



اسلام آباد(این این آئی) صدر آزاد جموں وکشمیر سردار مسعود خان نے اپنے حالیہ دورہ ترکی اور سعودی عرب سے واپسی پراپنے جاری کیے جانے والے بیان میں کہا کہ ان کا دورہ ترکی اور سعودی عرب انتہائی کامیاب رہا۔ انہیں ترکی میں تنازع کشمیر پر منعقدہ دو روزہ عالمی کانفرنس میں بطور مہمان خصوصی بلایا گیا تھا۔ کانفرنس میں ترکی کے سینئر سیاسی قیادت، ممتاز پارلیمانی راہنماؤں، سکالرز، ماہرین تعلیم، محققین، صحافی حضرات، رائے سازوں اور تجزیہ نگاروں نے دنیا بھر سے شرکت کی۔ وہاں اپنے خطاب میں مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی ابتر صورتحال اور سکیورٹی صورتحال پر اپنے شدید تحفظات کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے بین الاقوامی برادری اور کانفرنس کے شرکاء کو پیغام دیا کہ کشمیریوں کی نسل کشی کو رکوایا جائے اور انہیں مکمل تباہی سے بچایا جائے۔ ہندوستان پر اس قدر دباؤ بڑھایا جائے کہ وہ پانچ اگست اور اکتوبر 31کے غیر قانونی اقدامات کو واپس لے۔سردار مسعود نے کہا کہ انہوں نے جموں وکشمیر کے لوگوں کی طرف سے صدر طیب اردگان کا بے حد شکریہ ادا کیا جنہوں نے مسئلہ کشمیر کا بات چیت کے ذریعے پرامن حل نکالنے کی ضرورت پر زور دیا اورہمیشہ وکالت کی اورمسئلہ کشمیر پر ترکی کا اصولی اور دو ٹوک موقف اپنایا۔ صدر آزادکشمیر نے بتایا کہ انہوں نے انقرہ میں انٹرنیشنل سٹوڈنٹس کے گروپ سے بھی خطاب کیا، اور ان سے بات چیت کے دوران انہیں جموں وکشمیر کے مسئلے کا پس منظر اور کشمیر کی موجودہ صورتحال سے روشناس کرایا۔ سردار مسعود خان نے کہا کہ وہ اپنے بیرونی دورے کے دوسرے مرحلے میں جدہ سعودی عرب بھی گے۔ جہاں ان کی او آئی سی ہیڈ کوارٹر میں سیکرٹری جنرل ڈاکٹر یوسف بن احمد العثیمین سے ملاقات ہوئی۔ اس ملاقات کے دوران انہوں نے سیکرٹری جنرل کو کشمیر کی تازہ ترین صورتحال سے روشناس کرایا اور ہندوستانی عزائم سے آگاہ کیا۔صدر آزادکشمیر نے کہا کہ انہوں نے OICکمیشن سے یہ بھی کہا کہ 5اگست کے بھارتی اقدام کے بعد وہ مارچ2017کو جاری کی جانے والی اپنی رپورٹ پر عملدرآمد کروائیں جس میں ہندوستان کے ساتھ معاشی بائیکاٹ کا آپشن شامل تھا۔

سردار مسعود

مزید : صفحہ آخر