کامران بنگش سے ایم پی اے وزیرزادہ کی سربراہی میں اقلیتی وفد کی ملاقات

  کامران بنگش سے ایم پی اے وزیرزادہ کی سربراہی میں اقلیتی وفد کی ملاقات

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے سائنس و ٹیکنالوجی کامران بنگش نے کہا ہے کہ خیبرپختونخوا میں مسیحی، ہندو اور سکھ پاکستانیوں سمیت دیگر پاکستانیوں کو بھی سہولیات زندگی دینے کے حوالے سے حکومت فعال طور پر عمل پیراہے محکمہ سائنس و آئی ٹی نے پچھلے دنوں پشاور میں سکھ پاکستانیوں کے لئے خصوصی طور پر باباگرونانک سکول آف سائنس، ٹیکنالوجی، انجینئیرنگ، آرٹ میتھس (سٹیم) شروع کیا جس کا بنیادی مقصد اقلیتی پاکستانیوں کو معاشی، ٹیکنالوجیکل اور ایجوکیشنل سطح پر آگے لے کر آنا ہے۔ جبکہ PK-77 میں بھی مسیحی پاکستانیوں کے تمام مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کے لئے کوشاں ہیں۔ ان خیالات کا اظہار معاون خصوصی نے ممبر صوبائی اسمبلی وزیرزادہ کی سربراہی میں PK-77 سے آئے مسیحی پاکستانیوں کی وفد سے ملاقات میں کیا۔ اس موقع پر کامران بنگش نے وفد کو یقین دلایا کہ PK-77 میں تمام برادریوں کے مسائل کے حل کے لئے میرے آفس کے دروازے ہروقت کھلے ہیں اور بغیر کسی اقرباپروری یا پارٹی تعلق کے ایشوز کے حل کے لئے میں حاضر ہوں۔ مسیحی قبرستان اور یوسی 11 میں روڈ پختگی کے حوالے سے جلد لائحہ عمل تشکیل دیا جائے گا تاکہ اس مسئلے کو جلد از جلد حل کیا جاسکے۔ وفد میں PK-77 سے مسیحی پاکستانیوں کے نمائندے شکیل انجم نے معاون خصوصی کامران بنگش کے عوام دوست رویے کی تعریف بھی کی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر