ملک میں تیل کی تلاش اور کاروباری سہولتوں کو بہتر بنانے کی منظوری

ملک میں تیل کی تلاش اور کاروباری سہولتوں کو بہتر بنانے کی منظوری

  



اسلام آباد(آن لائن) کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے وزرات توانائی(پٹرولیم ڈویژن) کی تجویز پر ملک میں تیل کی تلاش اور پیداواربڑھانے کے شعبے میں سرمایہ کاری بڑھانے اورکاروباری سہولتوں کو بہتر بنانے کیلیے منظوری،توسیع،تجدید،منسوخی اور دیگر ضمنی امور سے متعلق اٹھارہ ملکی قوانین اور ان سے جڑے لگ بھگ پچیس قانونی مراحل کو آسان اور سادہ بنانے کے لیے انرجی ٹاسک فورس اور سٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے تجویز کردہ ترمیمات اور ان ترمیمات کو متعلقہ قوانین میں ضم کرنے کی منظوری دیدی۔ وزیر اعظم کے مشیر خزانہ و محصولات ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ کے زیر صدارت کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس میں ای سی سی نے ایف بی آر کی تجویز پر ’ایف بی آر ریفنڈ سیٹلمنٹ کمپنی لمیٹڈ‘ کے تحت جاری کردہ 30 ارب روپے کے بانڈز کے عوض اتنی ہی رقم کی ٹیکنکل سپلیمنٹری گرانٹ کی ادائیگی اور چیکوں کی صورت میں سیلز ٹیکس ریفنڈز ادا کرنے کی منظوری دی۔ اقتصادی رابطہ کمیٹی نے وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی مواصلات کی تجویز پر ٹیلی فون انڈسٹری آف پاکستان کی بحالی کے لیے کمپنی کے ذمہ 2.10 ارب روپے قرض اور1.03 ارب روپے سود کی ادائیگی کے لیے حکومت پاکستان کی جانب سے نیشنل بنک آف پاکستان کودی گئی ضمانت میں مزید دو سال کی تو سیع کی تجویز پر غور و خوض اور متباد ل تجاویز کیلیے کامرس مشیر عبد الرزاق داؤد کی سربراہی میں سات رکنی کمیٹی بنا دی جو دو ہفتوں کے اندر ای سی سی کو اپنی سفارشات پیش کرے گی۔ ای سی سی نے نیشنل ٹیلی کمیونی کیشن کارپوریشن کو آٹھ فیصد کم سے کم انکم ٹیکس کی ادائیگی سے مستثنیٰ کرنے کی وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی مواصلات کی تجویز پر اقتصادی امور کے وزیر حماد اظہر،آئی ٹی وزیر مقبول احمد صدیقی، بورڈ آف انویسٹمنٹ چیئر مین اورایف بی آر کے نمائندے پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دی جو اس تجویز پر غور و خوض کے بعدای سی سی کو موزوں سفارشات پیش کرے گی۔ای سی سی نے کامرس ڈویژن کی تجویز پر زیرو ریٹڈ ایکسپورٹ سیکٹر کو’ایکسپورٹ اوری اینٹڈ سیکٹرز جس میں کپڑا، قالین بانی،چمڑا،کھیلوں کا سامان اور آلات جراحی شامل ہیں،کا نام دینے کی منظوری دے دی۔ای سی سی نے وزارت توانائی(پاور ڈویڑن) کی تجویز پر تھل نووا پاور تھر لمیٹڈ اور تھر انرجی لمیٹڈ منصوبوں کے نفاذ کے لیے کیے گئے باہمی معاہدہ جات میں حکومت کی جانب سے ان دونوں منصوبوں کو 400 دنوں کے اندر ختم کرنے کے استحقاق کی مدت کو بڑھا کر490 دن کرنے کے ای سی سی کے فیصلہ کی تکمیل کے لیے متعلقہ معاہدہ جات میں مجوزہ شق شامل کرنے کی منظوری دے دی۔

اقتصادی رابطہ کمیٹی

مزید : صفحہ اول