مودی سرکار کشمیر میں ہندوؤں کی آباد کاری کیلئے اسرائیلی ماڈل اپنائے گی

مودی سرکار کشمیر میں ہندوؤں کی آباد کاری کیلئے اسرائیلی ماڈل اپنائے گی

  



نیویارک(این این آئی) نیو یارک میں تعینات بھارتی قونصل جنرل سندیپ چکراورتی نے اعتراف کیا ہے کہ نریندر مودی کی زیرقیادت بھارتی حکومت مقبوضہ کشمیر میں ہندوؤں کی آبادکاری کو یقینی بنانے کیلئے اسرائیلی طرز کا ماڈل اپنائے گی۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق سندیپ چکرورتی نے یہ اعتراف نیویارک میں کشمیری پنڈتوں اور بھارتیوں کے ایک اجتماع سے تقریر کے دوران کیا۔ انہو ں نے کہا کہ اگر اسرائیل فلسطینی علاقوں میں اپنے لوگوں کو آباد کر سکتا ہے تو ہم بھی اس کی پیروری کر تے ہوئے کشمیر میں ہندوؤں کو بسا سکتے ہیں۔ نیویارک میں ہونے والی اس تقریب کا انعقاد بھارتی فلمساز ویوک اگنی ہوتری کی 1990کی دہائی کے اوائل میں بے گھر ہونیوالے کشمیری پنڈتوں کے بارے میں بنائی جانے والی ایک فلم کے سلسلے میں کیا گیا تھا۔

کشمیر میں اسرائیلی ماڈل

سرینگر(این این آئی) مقبوضہ کشمیر میں مسلسل 115ویں روز بھی بھارتی فوجی محاصرہ جاری رہا جس کی وجہ سے وادی کشمیر میں خوف وہراس کا ماحول اورغیر یقینی صورتحال برقرار رہی۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ وادی میں دفعہ 144کے مسلسل نفاذ کے باعث معمولات زندگی مسلسل مفلوج ہیں۔ تجارتی مراکزبند ہیں جبکہ سکول اور دفاتر ویرانی کا منظر پیش کر رہے ہیں۔ انٹرنیٹ، ایس ایم ایس اور پری پیڈ موبائل فون سروسز بھی بدستور معطل ہیں۔ بڑھتی ہوئی سردی نے بھی لوگوں کی مشکلات میں اضافہ کر دیا ہے۔دوسری طرف مقبوضہ کشمیر میں بھارتی تحقیقاتی ادارے ”انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ“ نے معروف کشمیری تاجر ظہور احمد وٹالی کی چھ کروڑ روپے مالیت کی قطعہ اراضی قبضے میں لے لی ہے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق ظہور احمد وٹالی کی یہ اراضی ضلع بڈگام کے دو دیہات میں موجود ہیں۔ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے رواں برس اپریل میں مذکورہ اراضی ضبط کر لی تھی جو اب باقاعدہ طور پر قبضے لے لی گئی ہے۔ ظہور احمد وٹالی اس وقت ایک جھوٹے مقدمے میں نئی دلی کی تہاڑ جیل میں نظر بندہیں۔ دوسری طرف مقبوضہ کشمیرمیں گزشتہ روز بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں ضلع پلوامہ کے علاقے دربگام میں شہید ہونیوالے دو کشمیری نوجوانوں کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔کشمیر میڈیاسروس کے مطابق عرفان احمد راتھر کی نمازجنازہ ان کے آبائی علاقے چکورہ پلوامہ جبکہ عرفان احمد شیخ کی نماز جنازہ ٹہاب پلوامہ میں ادا کی گئی۔ ہزاروں افراد نے شرکت کی۔شہید نوجوانوں کو آزادی اور پاکستان کے حق میں اور بھارت کے خلاف فلک شگاف نعروں کی گونج میں سپرد خاک کیاگیا۔

مقبوضہ کشمیر

مزید : صفحہ اول