سندھ اسمبلی،ناروے واقعہ کے خلاف عبدالرشید کی قرارداد منظور

سندھ اسمبلی،ناروے واقعہ کے خلاف عبدالرشید کی قرارداد منظور

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ اسمبلی نے بدھ کو اپنی کارروائی کے دوران ناروے میں قرآن کریم کی بے حرمتی کیخلاف ایم ایم اے کے رکن اسمبلی سید عبدالرشید کی ایک مذمتی قراردادجسے ایوان کی تمام پارلیمانی جماعتوں کی حمایت سے مشترکہ قرارداد کی شکل دیدی گئی تھی متفقہ طور پرمنظور کرلی گئی۔قرارداد میں کہا گیا کہ ناروے میں قرآن پاک کی بیحرمتی مسلمانوں کی دل آزاری اور مذہبی رواداری کیخلاف ایک گہری سازش ہے۔وفاقی حکومت اس افسوس ناک واقعہ پر ناروے کی حکومت سے سخت احتجاج کرے اورانسانی حقوق کی تنظیموں اور دیگر عالمی اداروں کو مسلم امہ کے جذبات سے آگاہ کیا جائے۔ قرارداد پر اظہار خیال کرتے ہوئے تحریک لبیک پاکستان کی رکن ثروت فاطمہ نے کہا کہ قران پاک کی حرمت پر پہرہ دینے والے مردمجاہد کو سلام پیش کرتے ہیں آزادی اظہار کے نام پر مسلمانوں کی توہین و دل آزاری کی جارہی ہے،مغرب اسلاموفوبیا کے مرض میں مبتلا ہے۔سید عبدالرشید نے پوری قوم سے اپیل کی کہ ناروے کی مصنوعات کا بائیکاٹ کیاجاِئے،حکومت پاکستان ناروے کے سفیر کو ملک بدر کرے۔پی ٹی آئی کے رکن سعید اللہ آفریدی نے کہا کہ ناروے میں قرآن کریم کی بیحرمتی کے واقعے کی مذمت کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں اقلیتیں بھترانداز میں رہتی اورمحفوظ ہیں۔بین المذاہب ہم آہنگی کو نقصان پہنچانے والے واقعات کیخلاف عالمی سطح پر قانون سازی کی جائے۔ ایم کیوایم کی اقلیتی خاتون رکن منگلا شرما نے کہا کہ عالم اسلام کیساتھ دلی ہمدردی کا اظہارکرتی ہوں اورناروے میں قرآن پاک کی بیحرمتی کو دیکھنے والے افراد بھی قابل مذمت ہیں۔وزیر مذہبی امور ناصرحسین شاہ نے کہا کہ عمرالیاس ہمارے ہیرو ہیں جنہوں نے قرآن پاک کی حرمت کے لئے بہادری کی عظیم مثال قائم کی انہوں نے کہا کہ ناروے حکومت کے مذمت کرتے ہیں۔قرارداد کی منظوری کے بعدسندھ اسمبلی کا اجلاس 28نومبر کی صبح گیارہ بجے تک ملتوی کردیا گیا۔

مزید : صفحہ اول