پشاور، نوشہرہ، صوابی، مٹہ، مردان، رستم اور بخشالی میں قرآن پاک کی بے حرمتی کیخلاف مظاہرے

پشاور، نوشہرہ، صوابی، مٹہ، مردان، رستم اور بخشالی میں قرآن پاک کی بے حرمتی ...

  



پشاور،اضلاع (سٹی رپورٹر،نمائندگان پاکستان) مٹہ تحصیل کے نوحی گاوں چپریال میں جماعت اسلامی یوتھ کے زیر اہتمام تحفظ قران ریلی اور احتجاجی مظاہرے کا انعقاد ہوا،ریلی میں جے ائی یوتھ کے کارکنوں سمیت کثیر تعداد میں عوام نے بھی شرکت کی،احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے جماعت اسلامی یوتھ تحصیل صدر سید ناصر شاہ،جماعت اسلامی یوتھ چپریال کے صدر سید صابر شاہ اورجماعت اسلامی یوسی چپریال کے صدر قاری حضرت عظیم نے کہا کہ گزشتہ روز ناروے میں قران پاک کے بے حرمتی کے کوشش کر نے کے شدید الفاظ میں مزمت کرتے ہیں،اور عالمی قوتوں سے مطالبہ کرتے کہ مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کر نے کے کوششوں کا تدارک کیا جائے ورنا اس قسم کے ناپاک حرکتوں کانتیجہ سنگین حد تک خطرناک ہو سکتا ہے،انہوں قران پاک کے حر مت پر مر مٹنے والے نوجوان عمر الیاس کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ تمام مسلمان نوجوان اس عظیم غازی کے پیچھے کھڑے ہیں،مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے شرکاء نے اس ؑظم کا ارادہ کیا کہ قران پاک کے معاملے میں ہر مسلمان عمر الیاس ہے لہذا عالمی سازشی عناصر یہ بات زہن نشین کر لے کہ پاکستان کے چھپے چھپے میں حر مت قران پر مر مٹنے کیلئے نوجوان تیار بیٹھے ہیں ٭ 29نومبرکونوشہرہ کی تمام سیاسی اپوزیشن جماعتوں کاموجودہ حکمرانوں اور ناروئے میں قران پاک کی بے حرمتی کے خلاف احتجاجی مظاہرے کا اعلان اس سلسلے میں جمعیت علما اسلام ضلع نوشہرہ کی زیر اہتمام آل پارٹی کانفرنس منعقد کی گئی جس میں جمعیت علما اسلام کے ضلعی امیر قاری محمد اسلم، جنرل سیکرٹری مفتی حاکم علی، صوبائی کونسل کے رکن الحاج پرویز خان خٹک ون،انجینئر طارق خٹک عوامی نیشنل پارٹی کے جنرل سیکرٹری انجینئر حامد علی خان، سینئر نائب صدر عبدالصمد خان، سابق ضلعی صدر ملک جمعہ خان، ملک جلال خان پی پی پی کے سعید اللہ خان، مسلم لیگ ن کے حاجی نواب خان، امجد نوخارے نے شرکت کی آل پارٹی کانفرنس کے شرکاء نے اپنے خطابات میں کہا کہ موجودہ حکمرانوں نے عوام کی زندگیا ں اجیر ن کردی ہیں مہنگائی، بیروزگاری لاقانونیت اقرباپروری عروج پر ہے میرٹ میرٹ کا کھیل کھیلا جارہا ہے اور میرٹ کے نعرے لگا کر عوام کو بیوقوف اور اپنے مذموم مقاصد حاصل کرکے منظور نظر افراد کو نوازا جارہا ہے اور میرٹ کا گھلا گھونٹ کر غریب کا حق چھینا جارہا ہے انہوں نے مزید کہا کہ ناروئے میں قران پاک کی بے حرمتی ہوئی ہے اور ہمارے روشن خیال حکمرانوں نے صرف ناروئے کے سفیر کی دفتر خارجہ طلبی کرکے اپنا احتجاج ریکارڈ کردیا ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ حکمران ناروئے کے ساتھ اپنے تمام تر سفارتی تعلقات ختم کرنے کا اعلان کرتے کیونکہ انہوں کئی بار ہمارے مذہب کا مذاق اڑایا ہے لیکن ہمارے حکمران ٹھس سے مس نہیں ہو رہے ہیں انہوں نے مزید کہا کہ حکمران خود کسی اور کے ایجنڈے کیلئے عمل پیرا ہیں تو وہ کس طرح اسلام قران پر مر مٹے گے انہوں مزید کہا کہ اعلیٰ عدلیہ کے فیصلے کے بعد واضح ہو گیا ہے کہ عمران نیازی اینڈ کو کے تمام فیصلے غلط اور بد نیتی پر مبنی ہوتے ہیں ٭متحدہ اپوزیشن ضلع صوابی کے زیر اہتمام ضلعی امیر جے یو آئی مولانا فضل علی حقانی کی قیادت میں ناروے میں قر آن مجید کی بے حرمتی کے خلاف ایک بڑی ریلی نکالی گئی شرکاء نے قر آن مجید کی بے حرمتی کرنے والے ملعون لارنس تھورسن کے خلاف زبردست نعرے لگائے بعد ازاں کرنل شیر خان چوک میں ایک بڑا احتجاجی جلسہ عام ہوا جس سے ضلعی امیر مولانا فضل علی حقانی کے علاوہ ضلعی صدر مسلم لیگ ن حاجی شیراز خان، سابق ایم پی اے بابر سلیم، ضلعی چیر مین قومی وطن پارٹی مسعود جبار، اے این پی کے ضلعی سینئر نائب صدر حاجی غلام حقانی، پی پی پی کے ڈویژنل جنرل سیکرٹری جاوید اقبال انقلابی، مسلم لیگ ن کے صوبائی سینئر نائب صدر حاجی سجاد خان، جے یو آئی کے ضلعی سینئر نائب امیر حاجی غفور خان جدون، جنرل سیکرٹری نور الا سلام اور دیگر نے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ عالمی سطح پر مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کے لئے وقتاً فوقتاً عالم کفر کبھی قر آن پاک کی بے حرمتی تو کبھی پیغمبرﷺ کی شان میں گستاخی کر رہے ہیں ضرورت اس امر کی ہے کہ عالمی سطح پر امت مسلمہ کی قیادت مستقل طور پر اس کی تدارک کرنے کے لئے عملی کر دار ادار کریں ٭ ناروے میں قرآن کریم کی بے حرمتی کے خلاف دوبئی اڈہ کے عوام نے احتجاج مظاہرہ کیا اور ریلی نکالی، احتجاجی مظاہرے سے حافظ جمشد، حاجی امتیاز، ڈاکٹر زاہد یوسفزئی، حافظ صابر حسین اور دیگر سیاسی رہنماؤں نے خطاب کیا، مظاہرین نے بینر اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر ناروے حکومت مردہ آباد کے نعرے درج تھے اس موقع پر مقررین کا کہنا تھا کہ ناروے میں سوچھی سمجھی سازش کے تحت قرآن پاک کی سرعام بے حرمتی کی گئی اور مسلمانوں کے مذہبی جذبات کو مجروح کیا گیا لیکن ناروے حکومت ان کے خلاف کاروائی کرنے سے گریزاں ہے آئے روز ناروے میں توہین آمیز خاکے شائع کر کے اور قرآن مجید کی بے حرمتی جیسے واقعات رونما ہو رہے ہیں جو اقوام عالم کے امن کو تباہ کرنے کی گھناؤنی سازش ہے انہوں نے کہا کہ یورپ کو اس شرمناک واقعہ پر امت مسلمہ سے معافی مانگنی ہو گی اور امن کے دعویدار او آئی سی کو چاہئیے کہ واقع کا نوٹس لیں اور اس حوالے سے عالمی سطح پر قانون سازی کی جائے کوئی بھی مذہب کسی کے مقدس کتابوں اور مذہب سے توہین کرنے کی اجازت نہیں دیتا مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ ناروے کے مصنوعات کا قومی سطح پر بائیکاٹ کیا جائے، اس واقعہ میں ملوث افراد کی سرعام پھانسی تک تمام سفارتی تعلقات معطل کئے جائیں۔

مزید : صفحہ اول