”آسٹریلیا کو ہرانا مشکل ہے مگر ناممکن نہیں لیکن۔۔۔“ رمیز راجہ بھی میدان میں آ گئے

”آسٹریلیا کو ہرانا مشکل ہے مگر ناممکن نہیں لیکن۔۔۔“ رمیز راجہ بھی میدان میں ...
”آسٹریلیا کو ہرانا مشکل ہے مگر ناممکن نہیں لیکن۔۔۔“ رمیز راجہ بھی میدان میں آ گئے

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق کھلاڑی رمیز راجہ کا کہنا ہے کہ پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان ایڈیلیڈ میں شیڈول ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ میچ میں کینگروز کو شکست دینا بہت مشکل ہو گا، مگر ناممکن نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق رمیز راجہ نے کہا کہ پاکستانی کھلاڑیوں کو حوصلہ بلند کرنا ہو گا کیونکہ ڈرا کی کوئی گنجائش نہیں ہے اس لئے انہیں ہر صورت جیت حاصل کرنے کی سوچ کیساتھ میدان میں اترنا پڑے گا۔ جب آپ جیتنے کا سوچ کر میدان میں اترتے ہیں تو ناصرف اطمینان محسوس ہوتا ہے بلکہ ایک مثبت حس بھی جاگ اٹھتی ہے۔ آسٹریلیا نے اب تک اپنے تمام ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ میچز میں فتح حاصل کی ہے جو پاکستان کیلئے اچھی خبر نہیں۔ایک ٹیم میچ ہارنے کے بعد کیا کرتی ہے؟ یہ بہت مشکل سوال ہے کیونکہ آپ کے اعتماد کو ٹھیس پہنچی ہوتی ہے۔ پاکستان کو گزشتہ میچ میں اپنی غلطیوں کی وجہ سے شکست ہوئی، پہلی اننگز میں کم رنز بنائے اور جب لڑنا شروع کیا تو بہت دیر ہو چکی تھی، قومی ٹیم نے سلیکشن میں بہت غلطیاں کیں۔“

رمیز راجہ کا خیال ہے کہ ایڈیلیڈ میں آسٹریلیا کیخلاف قومی ٹیم کو 3 اوپنرز کھلانے کی ضرورت ہے تاکہ نئی گیند کا مقابلہ کیا جا سکے جو فلڈ لائٹس میں سوئنگ اور سیم کرتی ہے۔ انہوں نے کہا ”آپ کو آسٹریلیا میں تین اوپنرز کھلانے کی ضرورت ہے، پاکستانی ٹیم کو آسٹریلیا کی باﺅنسی وکٹوں پر ہمیشہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے، میں امید کرتا ہوں کہ موجودہ کرکٹرز ماضی کے کھلاڑیوں جانب سے کی جانے والی غلطیاں نہیں دہرائیں گے۔ پاکستان کو بہت عقلمندی سے کھیلنا ہو گا کیونکہ گیند بہت سوئنگ ہو گا۔ اس کے علاوہ بہتر تکنیک والی کرکٹ کھیلنے اور صحیح فیصلوں کی ضرورت ہے، محمد عباس کو ٹیم میں شامل بالکل ضروری ہے۔“

مزید : کھیل