”کرس گیل کے خلاف کارروائی کی جائے“ بی پی ایل فرنچائز چٹاگانگ چیلنجرز نے بی سی بی سے مطالبہ کر دیا

”کرس گیل کے خلاف کارروائی کی جائے“ بی پی ایل فرنچائز چٹاگانگ چیلنجرز نے بی ...
”کرس گیل کے خلاف کارروائی کی جائے“ بی پی ایل فرنچائز چٹاگانگ چیلنجرز نے بی سی بی سے مطالبہ کر دیا

  



ڈھاکہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) بنگلہ دیش پریمیر لیگ (بی پی ایل) فرنچائز چٹاگانگ چیلنجرز نے کرکٹ کے کھیل سے وقفہ لینے کے بیان پر ویسٹ انڈیز کے سٹار بلے باز کرس گیل کیخلاف ایکشن لینے کا مطالبہ کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چٹاگانگ چیلنجرز نے 11 دسمبر سے شروع ہونے والی بی پی ایل کیلئے کرس گیل کا انتخاب کیا۔ جنوبی افریقہ کی مزانسی سپر لیگ (ایم ایس ایل) میں جوزی سٹارز کی نمائندگی کرتے ہوئے انتہائی ناقص کارکردگی دکھانے والے کرس گیل کا کہنا ہے کہ انہیں سکواڈ میں اپنا نام دیکھ کر حیرت ہو رہی ہے حالانکہ میں نے انٹرنیشنل کرکٹ سے وقفہ لینے کا پروگرام بنا رکھا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ”میں بگ بیش میں نہیں جا رہا۔ مجھے نہیں معلوم کہ وہاں کیسی کرکٹ ہو گی، مجھے تو یہ بھی نہیں معلوم کہ میرا نام بی پی ایل میں پہنچ گیا ہے، لیکن مجھے ایک ٹیم میں شامل کیا گیا ہے اور مجھے بالکل نہیں پتہ کہ یہ سب کیسے ہوا۔“

چٹاگانگ چیلنجرز ٹیم کے ڈائریکٹر یونس کا کہنا ہے کہ ان کی ٹیم نے کرس گیل کے ایجنٹ سے بات چیت کی تھی اور پھر ہی انہیں سکواڈ میں منتخب کیا گیا۔ انہوں نے کہا ”کرس گیل کے ایجنٹ نے تصدیق کی تھی کہ کھلاڑی کو اس بارے میں معلوم ہے لیکن اگر اب وہ نہیں آئے تو ہمیں ڈرافٹ سے ہٹ کر کھلاڑی ڈھونڈنا پڑے گا، میرے خیال سے ایسے معاملات میں بی سی بی کو ایکشن لینا چاہئے تاکہ نظم و ضبط قائم رہے۔“

دوسری جانب بی سی بی کے چیف ایگزیکٹو نظام و الدین چوہدری نے رپورٹرز کو بتایا کہ کرس گیل کی ڈرافٹ میں شمولیت سے طریقہ کار کی جانچ پڑتال کی گئی ہے جس دوران کسی طرح کی کوتاہی سامنے نہیں آئی۔ ان کا کہنا تھا ”جب بھی کسی ملک کے قومی کرکٹر کا نام لیگ کیلئے ڈرافٹ میں شمولیت کیلئے آتا ہے تو طے شدہ طریقہ کار پر عملدرآمد کے بعد ہی نام شامل کیا جاتا ہے جبکہ کھلاڑی خود یا اپنے ایجنٹ کے ذریعے لیگ میں شمولیت پر دلچسپی ظاہر کر کے اپنا نام شامل کروا سکتا ہے۔میں نے ہر معاملے کی جانچ پڑتال کی ہے جس کے بعد معلوم ہوا کہ تمام عمل طے شدہ طریقہ کار پر عملدرآمد کے ذریعے مکمل کیا گیا۔ “

مزید : کھیل