اسلام آباد میں وزیر اعظم ہاؤس یا جی ایچ کیو کارُخ کرتےتوہمارے سامنے فوج بھی کچھ نہیں تھی:عبد الغفور حیدری

اسلام آباد میں وزیر اعظم ہاؤس یا جی ایچ کیو کارُخ کرتےتوہمارے سامنے فوج بھی ...
اسلام آباد میں وزیر اعظم ہاؤس یا جی ایچ کیو کارُخ کرتےتوہمارے سامنے فوج بھی کچھ نہیں تھی:عبد الغفور حیدری

  



سکھر(ڈیلی پاکستان آن لائن)جمعیت علمائےاسلام ف کے سیکرٹری جنرل اور سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ مولاناعبدالغفور حیدری نےکہاہے کہ یہ حکومت ریاست چلانے کے قابل ہی نہیں ہے، اس حکومت کو اکھاڑ پھینکنے کی ضرورت ہے،ہم اگراسلام آباد میں وزیر اعظم ہاؤس یا جی ایچ کیو کا رخ کرتے تو ہمارے سامنے فوج بھی کچھ نہیں تھی۔ 

نجی ٹی وی کےمطابق سکھرمیں جلسے سےخطاب کرتےہوئےمولاناعبدالغفورحیدری کاکہناتھا کہعمران خان نااَہل اورجعلی وزیراعظم ہے،اِنہیں قانون کااتنابھی  معلوم نہیں کہ آرمی چیف کی ملازمت میں توسیع کون کرسکتاہے؟ملک کی معیشت ڈوب رہی ہے،ڈاکٹرز،اساتذہ سمیت ساری عوام سراپااحتجاج ہے،موجودہ حکومت ڈیڑھ سال میں ایک کروڑ نوکریاں تو دور کی بات 100 لوگوں کو نہ نوکری اور نہ ہی گھر دے سکی۔اُنہوں نے کہا کہ جمعیت علمائے اسلام نےاپنی تحریک کو جس طرح زندہ رکھا،اِس کی جگہ کوئی اور تحریک ہوتی تو اس کا تسلسل برقرار نہ رکھ پاتے،ہم آزادی مارچ لے کر کراچی سے اسلام آباد پہنچے اور مولانا فضل الرحمن کے کہنے پر ایسا نظم و ضبط قائم کیا کہ دنیا نے بھی دیکھا کسی شخص کو کوئی نقصان نہیں پہنچا۔مولانا عبدالغفور حیدری نےکہاکہ اِس ریاست نےکام کرنےوالے لوگوں کاحشرنشرکرکےرکھ دیاہے،ذوالفقاربھٹو نے ملک کو آئین دیا،اِس لیےاُنہیں پھانسی پر چڑھا دیا گیا،نواز شریف نے موٹروے بنائی تو اُنہیں جیل میں ڈال دیا گیا،یہ حکومت ریاست چلانے کے قابل ہی نہیں ہے اس حکومت کو اکھاڑ پھینکنے کی ضرورت ہے۔

مزید : علاقائی /سندھ /سکھر