تہران کا ایٹمی سائنسدا ن محسن فخری زادہ کے قتل کا بدلہ لینے کا اعلان

تہران کا ایٹمی سائنسدا ن محسن فخری زادہ کے قتل کا بدلہ لینے کا اعلان
تہران کا ایٹمی سائنسدا ن محسن فخری زادہ کے قتل کا بدلہ لینے کا اعلان

  

تہران(ڈیلی پاکستان آن لائن)تہران نے ایٹمی سائنسدا ن محسن فخری زادہ کے قتل کا بدلہ لینے کا اعلان کردیا۔

ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ نے کہاکہ ایٹمی سائنسدان کے قاتلوں کو قرار واقعی سزا دی جائے گی،نامور ایٹمی سائنسداد ڈاکٹر محسن فخری زادے کو سفاک قاتلوں نے شہید کردیا،پہلی ترجیح قتل کے آلہ کاروں اور احکامات دینے والوں کو قرارواقعی سزا دینا ہے ،ایرانی سپریم لیڈر کاکہنا ہے کہ تمام متعلقہ شعبوں میں شہید کے مشن کو جاری رکھا جائے گا، پسماندگان کو تعزیت اور شہادت پر مبارکباد پیش کرتے ہیں ۔

ایرانی صدر حسن روحانی نے اسرائیل پرسائنسدا ن محسن فخری زادہ کے قتل کا الزام عائد کرتے ہوئے کہاہے کہ جوہری سائنسدان محسن فخری زادہ کے قتل کا جواب دیا جائے گا،ایران کو جلد بازی میں فیصلہ کرنے کے جال میں پھنسایا نہیں جا سکتا،اسرائیل کے متعلقہ حکام مناسب وقت پر جرم کا جواب دیں گے،حسن روحانی نے کہاکہ ایرانی قوم اس مجرمانہ فعل کا جواب دیئے بغیر نہیں رہیں گے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روزایران کے ایٹمی پروگرام کے بانی اور اہم ترین سائنسدان محسن فخری زادے کو تہران کے قریب اندھا دھند فائرنگ کر کے قتل کر دیا تھا ،دہشت گردوں نے فائرنگ سے قبل ایرانی سائنسدان کی گاڑی روکنے کےلئے بم حملہ بھی کیا تھااورحملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے تھے۔

ایران کے ٹاپ ایٹمی سائنسدان محسن فخری زادے کو جوہری ہتھیاروں کے خفیہ پروگرام کا سربراہ سمجھا جاتا تھا،فادر آف ایرانی نیوکلیر پروگرام سے مشہور محسن فخری زادے کو اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد نے انتہائی مطلوب افراد کی فہرست میں شامل کررکھا تھا جبکہ وہ امریکہ کی بھی ہٹ لسٹ میں شامل تھے۔محسن فخری زادے امام حسین یونیورسٹی میں طبیعیات کے پروفیسر،ایرانی وزارت دفاع اور مسلح افواج لاجسٹک کے سینئر سائنس دان تھے۔اس سے قبل رواں سال ایرانی جوہری تنصیبات پر بھی مختلف نوعیت کے حملے ہوئے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -