پاکستانی ٹیم کے روئیے میں نمایاں بہتری آئی ہے، نیوزی لینڈ کی وزارت صحت نے بھی تسلیم کر لیا

پاکستانی ٹیم کے روئیے میں نمایاں بہتری آئی ہے، نیوزی لینڈ کی وزارت صحت نے بھی ...
پاکستانی ٹیم کے روئیے میں نمایاں بہتری آئی ہے، نیوزی لینڈ کی وزارت صحت نے بھی تسلیم کر لیا
سورس:   Twitter

  

ویلنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) نیوزی لینڈ کی وزارت صحت نے کہا ہے کہ کرائسٹ چرچ کی بائیو سیکیور سہولت میں پاکستانی ٹیم کے روئیے میں نمایاں بہتری آئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی ٹیم کے 7 کھلاڑیوں کے نیوزی لینڈ کے میں کورونا کے ٹیسٹ مثبت آئے تھے جبکہ پاکستانی کھلاڑیوں پر بائیو سیکیور ببل میں طے شدہ قواعد کی خلاف ورزی کا الزام عائد کیا گیا تھا۔جن کھلاڑیوں کے ٹیسٹ مثبت آئے تھے ان میں سابق کپتان سرفراز احمد، عابد علی، روحیل نذیر، محمد عباس، دانش عزیز اور نسیم شاہ شامل ہیں۔

اس واقعے کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) وسیم خان نے 6 کھلاڑیوں کے ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد نیوزی لینڈ میں موجود ٹیم کو خبردار کیا تھا کہ کورونا سے متعلق گائیڈ لائنز پر عمل نہیں کیا گیا تو ٹیم کو واپس بھیج دیا جائے گا تاہم اب نیوزی لینڈ کرکٹ حکام نے خود تسلیم کیا ہے کہ قومی ٹیم کے رویے میں نمایاں بہتری آئی ہے۔

نیوزی لینڈ کی وزارت صحت کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ٹیم کو وارننگ جاری کی گئی تھی کہ وہ قرنطینہ اور آئیسولیشن قوانین کی پاسداری کریں اور اب اس سلسلے میں صورتحال میں واضح بہتری آئی ہے۔ 

وزارت صحت نے تعاون کرنے پر پاکستان کرکٹ ٹیم کے اراکین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ نیوزی لینڈ کو کورونا سے پاک رکھنے کیلئے ان قوانین کی پاسداری اور تعاون انتہائی ضروری ہے۔

مزید :

کھیل -